کورونا وائرس کے وار جاری۔۔!! پاکستان میں موسم کی صورتحال وباء پر کیا اثر ڈالنے والی ہے؟ محکمہ موسمیات نے پیشگوئی کر دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ملک کے بیشتر علاقوں میں آج موسم خشک رہے گا تاہم بالائی علاقوں میں مطلع جزوی ابر آلود رہے گا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ملک بھر میں آئندہ 24 گھنٹے کے دوران موسم خشک رہے گا جبکہ سردی کی شدت میں بھی کمی آئے گی جبکہ کشمیر اور اس سے ملحقہ پہاڑی

علاقوں میں مطلع جزوی طور پر ابر آلود رہے گا۔ گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران بھی ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم خشک رہا، اوکاڑہ، مری اور راولاکوٹ میں گرچ چمک کے ساتھ بارش ہوئی۔گزشتہ روز مری میں 4 ملی میٹر، اوکاڑہ میں ایک ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ سب سے کم درجہ حرارت کالام منفی 3 ڈگری سینٹی گریڈ، پاراچنار، مالم جبہ میں منفی ایک ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ دوسری جانب وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی زیرصدارت اجلاس میں کہا گیا ہے کہ پہلی سے آٹھویں جماعت کے طلبا کو پروموٹ نہیں کیا جا رہا، امتحانات یکم جون سے 15 جون تک ہوں گے۔ تفصیلات کے مطابق وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی زیرصدارت محکمہ تعلیم کی اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں سیکریٹری تعلیم، سیکریٹری کالجز ، ڈی جی پرائیویٹ اسکولزودیگرعہدیداران شریک ہوئے۔ اجلاس میں تعلیمی اداروں میں تعطیلات کے بعد نئے تعلیمی سال کے آغاز اور امتحانات کےحوالے سے حکمت عملی سمیت دیگرامورکاجائزہ لیا گیا اور پہلی سے 8 ویں جماعت کے طلبہ کواگلے گریڈ میں پروموٹ کرنے پر گفتگو ہوئی۔ اجلاس میں سندھ میں پہلی سے آٹھویں جماعت کے طلبا کو پروموٹ نہ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ پہلی سےآٹھویں جماعت کےامتحانات یکم جون سے 15جون تک ہوں گے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نئے تعلیمی سال کا آغاز جون سے ہوگا اور تمام اسکولوں کو بند رکھنے کی بھی ہدایت کی جبکہ وزیر تعلیم سندھ کےاسکولوں کو ہدایت پرعمل کرنے کے احکامات جاری کئے۔ محکمہ تعلیم سندھ کی اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نویں اوردسویں جماعت کے امتحانات ہوں گے۔ یاد رہے سندھ حکومت نے کرونا وائرس کے پیش نظر تعلیمی اداروں کی تعطیلات کو 30 مئی تک بڑھانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ سندھ حکومت نے کرونا کی وجہ سے گرمیوں کی تعطیلات قبل از وقت دے دیں جبکہ نویں اور دسویں جماعت کے 16 مارچ سے شروع ہونے والے امتحانات ملتوی کردیئے گئے۔ وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی زیرصدارت اجلاس میں کہا گیا ہے کہ پہلی سے آٹھویں جماعت کے طلبا کو پروموٹ نہیں کیا جا رہا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.