مولانا فضل الرحمان کا کامیاب یارکر۔۔۔!!! حکومت کی اہم اتحادی اور پاکستان کی بڑی سیاسی جماعت کی حمایت حاصل کر لی، عمران خان سخت پریشان

گجرات (نیوز ڈیسک ) پاکستان مسلم لیگ ق کے مرکزی رہنماء اور اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کےاقدام سے ادارے مضبوط ہوں گے، مولانا فضل الرحمان نے آرمی ایکٹ کی حمایت میں ووٹ دیا نہ ہی مخالفت کی، آج اپوزیشن اورحکومت ایک پیج پر ہیں۔

انہوں نے گجرات یونیورسٹی میں اکیڈمک بلاک کے افتتاح کے موقع پرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آرمی ایکٹ کی توسیع ملک وقوم کے وسیع ترمفاد میں ہے۔اپوزیشن جماعتوں نے حمایت کرکے ملکی یکجہتی کا ثبوت دیا ہے۔ چودھری پرویز الٰہی نے کہا کہ اپوزیشن اورحکومت ایک پیج پر ہیں۔ مولانا فضل الرحمان نے آرمی ایکٹ پرنہ حق میں ووٹ دیا نہ مخالفت کی۔ مولانا فضل الرحمان کے اس اقدام سے قومی ادارے مضبوط ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ 1122 نے اپوزیشن کو بھی ٹھنڈا کردیا ہے۔ ہمارے مخالفین بھی ایمرجنسی میں 1122 استعمال کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت ترقی کررہی ہے۔ جلد پاکستان معاشی طورپر مستحکم ہو جائے گا۔ مہنگائی کوکنٹرول کرنے کے لیے حکومت پوری توجہ دے رہی ہے۔ چودھری پرویزالہٰی نے کہا کہ آرمی اورحکومت نے ایران امریکا جنگ میں حصہ نہ بن کراچھا فیصلہ کیا۔ واضح رہے مسلم لیگ ق کے سربراہ چودھری شجاعت حسین نے سربراہ جے یوآئی(ف) مولانا فضل الرحمان کو آرمی ایکٹ ترمیم میں حمایت کیلئے منانے کی کوشش کی تھی،لیکن مولانا فضل الرحمان نے حمایت سے انکار کردیا تھا۔
ان کا کہنا تھا کہ فوج کو سیاست میں ملوث نہیں کرنا چاہتے،حکومت نے قانونی سقم کو دور کرنے کیلئے نااہلی کا ثبوت دیا۔ لیکن مولانا فضل الرحمان نے اسمبلی اجلاس میں شرکت نہ کرکے اس بات کا ثبوت دیا کہ وہ آرمی ایکٹ کی مخالفت یا حمایت میں ووٹ نہیں دے رہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.