کورونا میں سب سے بڑی تکلیف کیا ہوتی ہے ؟ صحت یاب ہونے کے بعد ٹی وی میزبان فرح سعدیہ کا بیان

لاہور (ویب ڈیسک) عالمی وبا کورونا وائرس کا شکار ہونے والی ٹیلی ویژن کی کامیاب میزبان فرح سعدیہ کا کہنا ہے کہ اب وہ بہتر ہیں لیکن اُن کے گزشتہ 4 ہفتے سخت تکلیف میں گُزرے ہیں۔میزبان فرح سعدیہ نے اپنے چاہنے والوں کو اپنی صحت سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے مائیکرو بلاگنگ سائٹ

ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ’اللّہ کا شکر ہے کہ اب میں بہتر ہوں لیکن کورونا وائرس کی تشخیص کی وجہ سے میرے گزشتہ 4 ہفتے شدید تکلیف اور اذیت میں گُزرے ہیں۔‘فرح سعدیہ نے لکھا کہ ’اس وبا کی سب سے سخت ترین بات یہ ہے کہ آپ اپنے پیاروں سے دور ایک جان لیوا تنہائی میں چلے جاتے ہیں جہاں آپ کو اس بات کا ڈر ہوتا ہے کہ اگر آپ کو کچھ ہوگیا تو آپ کے پیاروں کا کیا ہوگا۔‘آخر میں اُنہوں نے دُعا کرتے ہوئے لکھا کہ ’اللّہ تعالیٰ ہم سب کو اپنے حفظ وامان میں رکھے آمین۔‘فرح سعدیہ کے ٹوئٹ پر سیدہ طوبیٰ عامر نے جواب دیتے ہوئے لکھا کہ ’اللّہ پاک آپ کو مزید طاقت اور ہمت دے آمین۔‘ فرح سعدیہ کا کہنا ہے کہ اب وہ بہتر ہیں لیکن اُن کے گزشتہ 4 ہفتے سخت تکلیف میں گُزرے ہیں۔ ‘فرح سعدیہ نے لکھا کہ ’اس وبا کی سب سے سخت ترین بات یہ ہے کہ آپ اپنے پیاروں سے دور ایک جان لیوا تنہائی میں چلے جاتے ہیں جہاں آپ کو اس بات کا ڈر ہوتا ہے کہ اگر آپ کو کچھ ہوگیا تو آپ کے پیاروں کا کیا ہوگا۔‘آخر میں اُنہوں نے دُعا کرتے ہوئے لکھا کہ ’اللّہ تعالیٰ ہم سب کو اپنے حفظ وامان میں رکھے آمین۔‘

Sharing is caring!

Comments are closed.