اب کرونا سے ڈرنے اور گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ۔۔۔۔ مریض 3 دن میں مکمل طور پر صحت یاب، تازہ تحقیق نے عالمی سطح پر ہلچل مچا دی

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کے صحت یاب ہونے والے مریضوں کے جسم سے بلڈ پلازما نکال کر تشویشناک حالت میں پڑے مریضوں کو لگانے کا تجربہ چین میں پہلے ہی کیا جا چکا ہے اور اب امریکہ اور برطانیہ میں بھی یہ تجربہ حیران کن حد تک کامیاب ثابت ہو رہا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق امریکہ

اور برطانیہ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ جن مریضوں کو بلڈ پلازما دیا جاتا ہے وہ محض 3دن میں صحت یاب ہو جاتے ہیں۔اس کامیابی کے بعد امریکہ اور برطانیہ میں اس طریقہ علاج کی منظوری دے دی گئی ہے تاہم صحت مند ہونے والے مریضوں کی تعداد محدود ہونے کی وجہ سے بڑے پیمانے پر اس طریقے سے مریضوں کو علاج نہیں ہو سکتا۔رپورٹ کے مطابق امریکہ اور برطانیہ سے پہلے اٹلی میں بھی یہ طریقہ اپنایا جا چکا ہے اور بہت کامیاب رہا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ جب کوئی شخص کورونا وائرس میں مبتلا ہوتا ہے تو اس کا مدافعتی نظام اس کے خلاف مزاحمت کرتا ہے اوراس کے جسم میں اینٹی باڈیز پیدا ہوتی ہیں جو وائرس سے لڑتی ہیں۔ چنانچہ جو لوگ صحت مند ہو جاتے ہیں ان کے خون میں یہ اینٹی باڈیز موجود ہوتی ہیں جو نکال کر دوسرے مریضوں کو انجیکٹ کی جائیں تو یہ ان کے جسم میں جا کر بھی وائرس کے خلاف مدافعت کرتی ہیں اور وہ بہت جلد صحت یاب ہو جاتا ہے۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ پاکستان میں بھی اس طریقہ علاج پر کام ہو رہا ہے۔ پاکستانی ماہرین کا کہنا ہے کہ وہ صحت مند ہونے والے مریضوں کے جسم سے پلازما نکالنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ اس کے لیے حکومت سے اجازت طلب کی گئی ہے اور اجازت ملتے ہی اس پر کام شروع ہو جائے گا۔ ماہرین نے یہ بھی بتایا کہ چین کی طرف سے پاکستان کو دیگر امدادی سامان کے ساتھ پلازما بھی عطیہ کیا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.