تعلیمی ادارے کب کھلیں گے؟ ملک میں تعلیمی سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق اہم فیصلہ

اسلام آباد/ لاہور ( نیوز ڈیسک) وفاقی وزارت تعلیم نے ٹرائل بنیاد پر اسکول کھولنے سے متعلق صوبوں سے تجاویز طلب کرنے کا فیصلہ کرلیا۔تفصیلات کے مطابق وفاقی وزارت تعلیم نے 2 جولائی کو بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس طلب کرلی ہے، کانفرنس میں اسکولز کھولنے یا مزید بند رکھنے سے متعلق معاملہ زیر بحث لایا

جائے گا۔وزارت تعلیم کا کہنا ہے کہ صوبے تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق پلان23جون تک بھجوائیں۔ طلبا اور اساتذہ کو وبا سے محفوظ رکھنے کے اقدامات کو پلان کا حصہ بنایا جائے۔اس حکمت عملی سے تعلق ایچ ای سی اور وفاقی نظامت تعلیمات سمیت متعلقہ حکام سے تجاویز طلب کی گئی ہیں۔ بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس کے بعد قومی رابطہ کمیٹی کو سفارشات بھجوائی جائیں گی۔ذرائع کے مطابق قومی رابطہ کمیٹی تعلیمی اداروں کو کھولنے یامزید بند رکھنے کاحتمی فیصلہ کرے گی۔یاد رہے کہ 15 جون کو اسلام آباد ہائی کورٹ نے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کی درخواست مسترد کردی تھی۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق درخواست پر سماعت کی تھی اور دوران سماعت درخواست مسترد کی گئی۔عدالت میں سماعت کے دوران درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا تھا کہ پرائیوٹ اسکولوں سے منسلک لوگوں کی نوکریاں ختم ہو رہی ہیں، جس پر چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے سماعت کے دوران استفسار کیا کہ کیا باقی ممالک میں اسکول کھولے گئے؟ ترقی یافتہ ممالک میں بھی اسکول نہیں کھلے۔ خیال رہے کہ ملک بھر میں کوران کی لہر بڑھنے کے بعد ملک بھر کے تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا جو کہ تاحال بند ہیں ، اس حوالے سے پرائیوٹ سکول ایسوسی ایشن کی جانب سے بار بار مطالبہ کیا گیا کہ سکولوں کو کھولا جائے تا کہ بچوں کا جو تعلیمی حرج ہو رہا ہے اس بچوں کو بچایا جا سکے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.