ویلکم مائی فرینڈ ویلکم ۔!! عبدالعلیم خان کی پنجاب کابینہ میں دوبارہ شمولیت، کونسی وزرات سونپی جائے گی؟ حکومتی فیصلہ آگیا

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان کو دوبارہ پنجاب کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے رہنما عبدالعلیم خان کو دوبارہ پنجاب کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ عبدالعلیم خان کل صوبائی وزیرکی حیثیت سے حلف اٹھائیں گے۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی رہنما عبدالعلیم خان کے پاس وزارت کونسی ہوگی یہ فیصلہ بعد میں کیا جائے گا۔ یاد رہے کہ گزشتہ سال 6 فروری کو نیب لاہور نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور آف شور کمپنیوں کیس میں پنجاب کے سینئر وزیر عبد العلیم خان کو گرفتار کیا تھا۔ نیب کی جانب سے گرفتاری کے بعد عبدالعلیم خان نے اپنا استعفی وزیراعلیٰ پنجاب کو بھجوا دیا تھا۔ علیم خان کا کہنا تھا کہ مقدمات کا سامنا کریں گے، آئین اور عدالتوں پر یقین رکھتے ہیں، مجھ پر آمدن سے زائد اثاثوں کا نہیں، آف شور کمپنیوں کا مقدمہ ہے۔ دوسری جانب سابق سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کو دوبارہ وزارت دینے کا فیصلہ، عبدالعلیم خان آج شام پانچ بجے گورنر ہاؤس میں وزارت کا حلف اٹھائیں گے۔ گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور، عبد العلیم خان سے حلف لیں گے۔ پنجاب حکومت کے ذرائع کے مطابق عبدالعلیم خان کو کون سا محکمہ دیا جائے؟ فیصلہ بعد میں کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب اور تحریک انصاف کے سینئر رہنما عبدالعلیم خان میں دوریاں کم ہونے لگیں۔ ایوان وزیراعظم کے اشارے پر دونوں رہنماؤں کی ملاقات ہوئی تھی۔ جہاں عبدالعلیم خان کی وزارت کے معاملات وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات میں طے ہوئے تھے۔ عبدالعلیم خان کی دوبارہ صوبائی کابینہ میں شمولیت کی چہ مگوئیاں شروع ہوگئی تھیں۔ یاد رہے تحریک انصاف کے سینئر رہنما عبدالعلیم نے گرفتاری کے بعد پارٹی سرگرمیوں سے متعلق خاموشی اختیار کر لی تھی۔ عبدالعلیم خان نے نیب کیس کی وجہ سے چھ ماہ قبل وزارت بلدیات سے استعفی دے دیا تھا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.