اصل کہانی سامنے آگئی

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور کے علاقے گجرپورہ میں مبینہ لوٹ مار کے دوران 20 سالہ کمپاﺅنڈر لڑکی کے ساتھ غلط کاری کے الزام میں پولیس نے 3 ملزمان کو حراست میں لے لیا ہے ۔سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید کے مطابق ہومیو پیتھک کلینک پر بطور کمپاﺅنڈر کام کرنے والی لڑکی

محمودہ کے ساتھ لوٹ مار کے دوران غلط کاری کرنے کے الزام میں 3 افراد ندیم، فیضان اور سلیم کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔سی سی پی او کا کہنا ہے کہ ایک ملزم قاسم کی گرفتاری کے لیے بھی چھاپے مارے جارہے ہیں۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ زیر حراست ملزمان میں سے ایک متاثرہ لڑکی سے پہلے بھی زبردستی دوستی کرنا چاہتا تھا، ملزم نےمتاثرہ لڑکی کے انکار لوٹ مار کا رنگ دے کر یہ شرمناک کام کیا ہے۔پولیس حکام کا کہنا ہے تفتیش جاری ہے مزید حقائق جلد سامنے لائے جائیں گے۔ دوسری جانب بیوروکریسی میں اعلیٰ سطح پر اکھاڑ پچھاڑ کا عمل جاری، حکومت پنجاب نے 4 محکموں کے سیکرٹریز تبدیل کردیئے۔پنجاب حکومت کی جانب سے سیکرٹری ٹرانسپورٹ اسد رحمان گیلانی کا تبادلہ کرکے سیکرٹری فوڈ تعینات کردیا گیا ہے۔ سیکرٹری سروسز شہریار سلطان کو سیکرٹری ٹرانسپورٹ تعینات کیا گیا ہے۔ ڈاکٹر محمد شعیب اکبر کی بطور سیکرٹری سروسز تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے جبکہ سیکرٹری فوڈ وقاص محمود کو او ایس ڈی بنا دیا گیا۔ محکمہ ایس اینڈ جی ڈی اے کی جانب سے تبادلوں کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔دوسری جانب دو اعلیٰ افسران کے تقرروتبادلے کے احکامات جاری کردیئے۔ چیئر پرسن ایف بی آر نوشین جاوید امجد کو ہٹا کر محمد جاوید غنی کو چیئرمین ایف بی آر کا اضافی چارج سونپ دیا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.