کورونا پاکستان اور انڈیا کے ساتھ کیا کرنیوالا ہے ؟ ریڈ کراس کی تہلکہ خیز وارننگ

اسلام آباد (ویب ڈیسک)ریڈ کراس کاکہناہےکہ جنوبی ایشیا کورونا کا نیا ہاٹ اسپاٹ،پاکستان ، بھارت ،بنگلہ دیش میں انسانی المیہ جنم لے سکتاہے،دوسری جانب آئی ایم ایف نےمتنبہ کیا ہےکہ امریکی معاشی بحالی کو سب سے بڑا خطرہ کورونا کے کیسز دوبارہ بڑھنے سے ہے۔تفصیلات کےمطابق ریڈ کراس اور ریڈ کریسنٹ سوسائٹیز کی بین الاقوامی فیڈریشن کاکہناہےکہ

بھارت ، پاکستان اور بنگلہ دیش ملکر تیزی سے وائرس کا اگلا مرکز بن رہے ہیں،جب کہ دنیا کی توجہ امریکا اور جنوبی امریکا کے ابھرتے ہوئے بحران پر مرکوز ہے ، جنوبی ایشیاء میںتیزی سے انسانی المیہ جنم لےرہا ہے،کوویڈ ۔19 جنوبی ایشیا (جو انسانیت کا ایک چوتھائی حصہ ہے)میں ایک خطرناک شرح سے پھیل رہا ہے ۔ادھر عالمی مالیاتی فنڈ(آئی ایم ایف) نےمتنبہ کیا ہےکہ امریکی معاشی بحالی کو سب سے بڑا خطرہ کورونا کے کیسز دوبارہ بڑھنے سے ہے کیوں کہ اس کے باعث کھلتے ہوئے کاروبار دوبارہ بند کیے جاسکتے ہیں۔ آئی ایم ایف کی جانب سے سالانہ رپورٹ میں کہاگیاہےکہ امریکی حکومت کو غربت کے خاتمے، شہریوں کی مدد اور صحت کے نظام میں بہتری کیلئے آئندہ مہینوں میں مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔دوسری جانب آئی ایم ایف کا ہی کہنا ہےکہ امریکی معیشت دوسری سہ ماہی میں 37 فیصد تک سکڑ گئی جبکہ 2020میں امریکی معیشت کو 6.6فیصد تک دھچکا لگے گا۔دوسری جانب بھارت میں کورونا کیسز کی تعداد 10 لاکھ سے تجاوز کرگئی جس کے بعد بھارت کورونا کے سب سے زیادہ کیسز والا دنیا کا تیسرا ملک بن گیا ہے۔بھارتی میڈیا کےمطابق وزارت صحت کا بتانا ہے کہ گزشتہ روز ملک میں کورونا کے اب تک ایک روز میں سب سے زیادہ کیسز اور اموات رپورٹ ہوئیں جن میں 34956 نئے مریض سامنے آئے جب کہ 687 افراد موت کے منہ میں چلے گئے جس کے بعد ملک میں کورونا کے کیسز 10 لاکھ 3 ہزار سے تجاوز کرگئے اور اموات 25 ہزار 600 سے بڑھ گئی ہیں۔بھارتی وزارت صحت کے مطابق ملک بھر میں 6 لاکھ 35 ہزار سے زائد کورونا کے مریض صحتیاب بھی ہوئے ہیں جس کے بعد صحتیاب ہونے والے مریضوں کی شرح 63 فیصد ہوگئی ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.