دلہن نے برات والوں کے ساتھ کیا کر دیا

ٹونٹی فور سیون ڈیلی نیوز!شادی ایک خوشی کا موقع ہوتا ہے لیکن جب تک اس میں‌لڑائی نہ ہو رشتہ داروں کی ناراضگی نہ ہو تب تک اسے مکمل نہیں ‌سمجھا جاتا . پاکستان میں ‌تو ایسا ہر شادی میں ‌ہوتا ہے لیکن چائنہ بھی کم نہیں ‌جہاں ‌شادی کا ماحول کسی سرکس سے کم نہیں‌ ہوتا حال ہی میں ‌ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں

ایک دلہن کو دیکھا جاسکتےا ہے کہ سٹیج پر کھڑے ہوکر باراتیوں پر چھت گرا دیتی ہے . یہ ویڈیو بہت زیادہ وعائرل ہوئی اور لوگ اس سے خوب محفوظ ہوئے .‌ دوسری جانب شادی کے یوں تو کئی فوائد ہیں لیکن شادی کرنے کے چند طبی فائدے بھی ہیں ، ان فوائد کو جان کر ہر شخص کوشش کرے گا کہ اس کی جلد سے جلد شادی ہوجائے۔ برطانوی اخبار کے مطابق سب سے پہلا فائدہ یہ ہے کہ انسان دماغی امراض سے محفوظ رہتا ہے، شادی کرنے کی وجہ سے لوگوں کا ذہنی تناؤ کم ہوتا ہے کیوں کہ ازدواجی زندگی ہارمونز میں تبدیلی لاتا ہے۔ ان ہارمونز میں تبدیلی انسان کے ذہن کو پرسکون کرتا ہے۔ جس سے انسان میں ڈپریشن کی شرح بھی کم ہوجاتی ہے۔ محققین کے مطابق شادی کرنے سے ہارٹ اٹیک ہونے کے خطرات کم ہوجاتے ہیں، شادی شدہ خواتین اور مردوں میں بالترتیب 65 اور 66 فیصد ہارٹ اٹیک کم ہوجاتا ہے۔ اس کی بنیادی وجہ شادی کے بعد خون کی شریانوں میں موجود رکاوٹوں کا کم ہوجانا ہے۔ شادی شدہ لوگ اپنی جان کا خصوصی خیال رکھتے ہیں، شادی کرنے سے انسان کو جیون ساتھی مل جاتا ہے، انسان ڈرگز وغیرہ سے کنارہ کشی کرتا ہے، ڈرائیونگ کرتے وقت محتاط رہتا ہے، کیوں کہ اسے

اپنے بیوی، بچوں کا احساس ہوتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق اگر آپ اپنی بیوی سے خوش ہیں تو کنوارے مرد کی نسبت آپ میں فالج کا خطرہ 64 فیصد تک کم ہوجائے گا لیکن اگر آپ ناخوش ہیں تو فالج کے معاملے میں آپ کو شادی کا کوئی فائدہ نہیں ملے گا۔ کیوں کہ فالج ایسی بیماری ہے کہ اگر آپ کو وقت پر طبی امداد مل جائے تو آپ اس مہلک بیماری پر کنٹرول پا لیتے ہیں ورنہ یہ بیماری بگڑ جاتی ہے۔ اگر آپ کے بیوی سے تعلقات اچھے ہیں تو آپ کی نیند ان لوگوں کے مقابلے میں اچھی اور پرسکون ہوگی جو کنوارے ہیں یا جن کی ازدواجی زندگی کے معاملات اچھے نہیں، بہتر نیند آپ کی صحت کیلئے بہت ضروری ہوتی ہے کیوں کہ نیند پوری نہ کرنے سے انسان چڑ چڑا ہو جاتا ہے۔ شادی شدہ افراد کی زندگی ان لوگوں کے مقابلے میں طویل ہوتی ہے جو غیر شادی شدہ ہوتے ہیں، غیر شادی شدہ لوگوں میں جلدی مرنے کے امکانات دوگنا زیادہ ہوتے ہیں

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *