نوبیاہی خوبرواداکارہ نمرہ خان نے شادی کے چند ہی دن بعد بڑا قدم اٹھا لیا۔۔۔ایسی خبر کہ سن کر مداح بھی افسردہ ہوجائیں گے

لاہور(ویب ڈیسک) حال ہی میں شادی کے بندھن میں بندھنے والی پاکستان شوبز کی با صلاحیت خوبرواداکارہ نمرہ خان نے اپنے مداحوں کو بتا یا ہے کہ وہ شوبز کو نہیں چھوڑوں گی اور کام کرتی رہیں گی کیو نکہ ان پر شوہر کی جانب سے کسی قسم کی کوئی پابندی نہیں ۔

تفصیلات کے مطابق انمرہ خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر لائیو سیشن میں بتایا کہ میرے شوہر راجہ افتخار اعظم ان کے والدین کی پسند ہیں جس پر میں نے سرتسلیم خم کیا، ہماری شادی گھر والوں کی مرضی سے ہوئی اور میں اس پر بہت خوش ہوں، شوہر لندن میں پولیس آفیسر ہیں۔ایک سوال کے جواب میں اداکارہ کاکہنا تھا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ اب میں کام نہیں کروں گی ،شوہر نے مجھے مکمل آزادی دی ہے اس لئے میں کام کرتی رہوں گی،مداحوں کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ دوسری طرف ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے نمائندوں نے بلوچستان میں کروناوائرس کی مقامی سطح پرمنتقلی پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے کوئٹہ میں کرفیولگانے کا مطالبہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق کوئٹہ سول ہسپتال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر یاسر کا کہنا تھا کہ صوبے میں لاک ڈاون میں نرمی کے باعث کیسز میں اضافہ ہورہا ہے، ان کا کہنا تھا کہ اس وقت 31ڈاکٹرز اور متعدد اہلکار کروناوائرس کے مرض میں مبتلا ہوچکے ہیں ،بلوچستان میں صحت کی سہولتیں نہ ہونے کے برابرہیں ۔،انہوں نے کہا کہ کروناوائرس سے نمٹنے کےلئے حکومت کو سخت فیصلے کرنے ہونگے صوبے میں مکمل لاک ڈاون کی اشد ضرورت ہے ،تاہم شہری لاک ڈاون پر بالکل عملدرآمد نہیں کررہے ہیں صوبائی حکومت کو کرفیو کے نفاز کے آپشن پر غورکرنا چاہئے ،اور صوبے میں 15دنوں کےلئے کرفیونافذ کیا جائے ،لاک ڈاون میں نرمی سے چار دنوں میں کیسز میں اضافہ ہوگیاہے۔ڈاکٹر یاسر نے کہا کہ صوبے میں ٹیسٹنگ سروس انتہائی ناکافی ہے،ٹیسٹنگ سروس کم ہونے کی وجہ سے تشخیص کا عمل سست روی کا شکار ہے،اس وقت 31ڈاکٹرز، پانچ پیرامیڈیکل اسٹاف سمیت دیگر عملہ کورونا وائرس کا شکار ہوچکے ہیں،خوف اور عدم سہولیات کے باعث صوبے کے ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کمی شروع ہوچکی ہے۔انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں صحت کے شعبے کی صورتحال ناگفتہ بے ہے،انہوں نے کہا وینٹیلیٹرز تک آکسیجن کی رسائی نہیں، شیخ زید ہسپتال میں آکسیجن پلانٹ خراب ہے، وینٹیلیٹرز کو آکسیجن سلینڈر کے ذریعے فراہم کیا جا رہا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *