ثمینہ احمد اور منظر صہبائی کی شادی کی دھوم۔۔!! نوبیاہتے جوڑے کے متعلق ایسے انکشاف جو کوئی سوچ بھی نہ سکے

لاہور (ویب ڈیسک )پاکستانی شوبز انڈسٹری کے مداح تو ان دو بڑے ناموں ثمینہ احمد اور منظر صہبائی سے خوب واقف ہیں ، یہ دونوں ہی شوبز سے دہائیوں سے وابستہ ہیں اور اپنے بے مثال کام کے باعث شہرت کی بلندیوں کو چھوا ۔ان کے نکاح کی خبر نے انٹر نیٹ پر طوفان برپا کر دیا

ہے اور یہ طوفا ن ایک اچھی نیت کے ساتھ چل رہاہے یعنی جوڑے کو ہر طر ف سے مبارک ہی موصول ہو رہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق ثمینہ احمد اب ثمینہ صہبائی بن چکی ہیں تاہم اب آپ کو جوڑے کے بارے میں وہ باتیں بتاتے ہیں جو کہ شائد آپ کو معلوم نہیں ہیں ۔ ثمینہ احمد 11 فروری 1950 میں پیدا ہوئیں جبکہ منظر صہبائی کی تاریخ پیدائش 19 مارچ 1950 ہے یعنی اداکارہ اپنے دولہے سے صرف ایک مہینہ ہی بڑی ہیں جوکہ نہایت ہی حسین اتفاق ہے ۔جبکہ آپ کو یہ جان کر حیرت ہو گی کہ منظر صہبائی کی یہ پہلی شادی ہے اور انہوں نے اس سے قبل کبھی کسی سے شادی ہی نہیں کی تاہم ثمینہ کی یہ دوسری شادی ہے۔ ثمینہ احمد کی پیدائش تاریخی شہر لاہور میں ہوئی اور وہ اپنے والدین کی سب سے بڑی بیٹی ہیں جبکہ ان سے چھوٹے چار اور بھی بھائی بہن ہیں ، ثمینہ کے تین بھائی اور ایک بہن ہیں یعنی وہ یوں پانچ ہو گئے ۔ثمینہ کی والدہ گھر گہرستی سنبھالتی تھیں جبکہ ان کے والد فارسٹ افیسر تھے ، ان کے والد کی نوکری کی نوعیت ایسی تھی کہ انہوں نے تقریبا پورا پاکستان ہی گھوما ہواہے ۔ثمینہ کے والد کی پوسٹنگ اس وقت پشاور میں تھی جب 1965 میں ان کا انتقال ہو گیا ، ثمینہ کی والدہ شوہر کے انتقال کے بعد برطانیہ میں ” کاسموٹولوجی “ کی تعلیم حاصل کرنے کیلئے چلیں گئیں اور پڑھائی مکمل کر کے آنے کے بعد انہوں نے کاسمیٹک برانڈ ” الزبیتھ آرڈرن “ کے ساتھ کام شروع کر دیا ۔ثمینہ اپنی فیملی میں واحد تھیں

جنہیں آرٹس میں دلچسپی تھی ، انہوں نے معاشیات میں ماسٹر ز کیا اور آرٹس کو اپنا میجر مضمون رکھا ، ثمینہ احمد محض 17 برس کی تھیں جب انہوں نے پی ٹی وی کے سٹوڈیو کا دورہ کیا ، ایک مرتبہ وہ اپنے انکل ، والدہ اور چھوٹے بہن بھائیوں کے ساتھ ٹی وی چینل صرف یہ دیکھنے کیلئے گئیں تھیں کہ ٹرانسمیشن کس طرح کی جاتی ہیں ، اسی دوران معروف ڈرائریکٹر اور پروڈیوسر اسلم اظہر نے انہیں دیکھا اور پوچھا کہ آپ کو اداکاری میں دلچسپی ہے ؟۔بس یہاں سے ثمینہ احمد کے اداکار ی کے کیریئر کا آغاز ہو گیا ، انہوں نے اپنا پہلا ڈرامہ کیا اور انہیں یہ کافی حد تک آسا ن محسوس ہوا ، انہوں نے اپنی تعلیم کو بھی جاری رکھا اور اس دوران وہ کئی دیگر ڈراموں میں بھی اداکاری کرتی رہیں لیکن اس دوران انہوں نے اداکاری کو ہی اپنا پروفیشن بنانے کا فیصلہ کرلیا تھا اور وہ اس کے بارے میں جذباتی بھی تھیں ۔اس کے بعد انہوں نے پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا اور آج وہ شوبز انڈسٹری میں تقریبا پانچ دہائیاں مکمل کر چکی ہیں ۔ثمینہ احمد نے پہلی شادی فلمساز فرید احمد سے کی ، فرید احمد نے ثمینہ سے ملاقات کے محض دس روز کے بعد ہی انہیں شادی کی پیشکش کر دی ، اس وقت اداکارہ بہت ہی کامیاب تھیں اور انہو ںنے گھر بسانے کا فیصلہ کر لیا ، ثمینہ نے فرید احمد کو ایک سلجھا ہوا انسا ن پایا ۔ثمینہ احمد کے دو بچے ہیں ، ایک بیٹا اور ایک بیٹی،

ان کا بیٹے کا نام زین ہے اور وہ اداکاری کے بارے میں این اے پی اے میں پڑھاتا ہے ۔ثمینہ کیلئے زندگی زیادہ آسان نہیں رہی ، ان کی شادی شدہ زندگی میں بھی مشکلات آنا شروع ہو گئیں کیونکہ فرید احمد ان سے طلاق چاہتے تھے تاکہ وہ شمیم آرا ءسے شادی کر سکیں ، ثمینہ نے شوہر کو جانے کی اجازت دیدی کیونکہ وہ سمجھ چکی تھیں کہ یہ اب ٹھہریں گے نہیں تاہم فرید احمد نے ان کے ساتھ دیانت داری دکھائی اور انہیں سب سچ بتایا ۔منظر صہبائی کے والد کا نام اصرار صہبائی تھی ، وہ ایک پبلک پراسیکیوٹر تھے اور ان کا تبادلہ لاہور میں ہوا تھا ، منظر صہبائی کی پیدائش سیالکوٹ میں ہوئی انہوں نے اپنا بچپنا اور زندگی کے قیمتی ترین سال لاہور میں گزارے ، انہوں نے جونیئر ماڈل سکول سے تعلیم حاصل کی ۔منظر صہبائی کا ایک بھائی سرمد صہبائی بھی ہے جو کہ ڈائریکٹر ، مصنف اور شاعر ہیں ۔ منظر صہبائی تعلیم حاصل کرنے کیلئے جرمنی چلے گئے اور وہیں پر پکے ہو گئے ، انہوں نے جرمنی میں 1976 سے 2011 تک قیام کیا اور پھر پاکستان واپس آ گئے ۔منظر صہبائی نے اپنے اداکاری کے کیرئر کا آغاز کالج کے زمانے سے ہی کر دیا تھا کیونکہ وہ گورنمنٹ کالج کی ڈرامہ سوسائٹی کے سرگرم رکن تھے ، ان کا پہلا ڈرامہ ” پانی کے قیدی “ تھا جو کہ 1972 میں نشر ہوا ، انہوں نے فلمی دنیا میں قدم شعیب منصورکی فلم ’ بول “ سے رکھا جو کہ 2011 میں ریلیز ہوئی ۔ منظر صہبائی اپنے شاندار اداکاری کے کیریئر کے دوران کئی اہم ایوارڈ ز بھی حاصل کر چکے ہیں ، انہوں نے لکس سٹائل اور سارک فلم ایوارڈ حاصل کیا ، انہوں نے 2013 میں فلم ” زندہ بھاگ “ میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے جوکہ اکیڈمی ایوارڈز کیلئے نامزد بھی ہوئی تھی ۔ حال ہی میں نجی ٹی وی پر چلنے والے معروف درامے ” الف “ کو کون بھول سکتا ہے جس میں منظر صہبائی نے شاندار اداکاری کے جوہر دکھا کر اپنے کردار کو امر کر دیا ، اس ڈرامے میں انہوں نے حمزہ علی عباسی کے دادا کر کردار ادا کیا ہے جوکہ ترکی کے سب سے بڑے کلیگرافر ہیں ۔اس ڈرامے میں اداکاری کے باعث شائقین کو ان کے کریکٹر ” دادا جان “ سے محبت ہو گئی ۔آپ کو یہ جان کر نہ صرف شدید حیرت ہو گی بلکہ آپ اپنی انگلیاں بھی منہ میں دبا لیں گے کیونکہ شاہین صہبائی نے اب تک شادی ہی نہیں کی تھی اور ثمینہ احمد ان کی پہلی بیوی ہیں ، ان کی شادی چار اپریل 2020 کو ایک نجی چھوٹی سی تقریب میں ہوئی جس میں صرف اہل خانہ کے ہی لوگوں نے شرکت ثمینہ احمد اور منظر صہبائی کی شادی کی دھوم۔۔!! نوبیاہتے جوڑے کے متعلق ایسے انکشاف جو کوئی سوچ بھی نہ سکے

Sharing is caring!

Comments are closed.