لڑکے نے سب کو ہلا دیا

ابوجہ(نیوز ڈیسک) دنیا کا کوئی مذہب ایسا نہیں جو گناہ کے کاموں کو جائز قرار دیتا ہو لیکن بعض لوگ شیطان کے ایسے چیلے ہوتے ہیں کہ اپنی بے حیائی کی توجیح بھی مذہب سے نکال لیتے ہیں۔ نائیجیریا سے تعلق رکھنے والے ایک عیسائی نوجوان نے بھی ایک ایسا ہی شرمناک کام کر ڈالاہے۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اگوتا کے علاقے سے تعلق رکھنے والے 25 سالہ ٹیچر کارنیلئیس چیڈی نے اپنی 17 سالہ بہن سے شادی کر لی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ بائبل میں ایسی شادی کی اجازت دی گئی ہے۔اس شادی میں کارنیلئیس کے بڑے بھائی نے پادری کے فرائض سر انجام دئیے کیونکہ کوئی اور پادری اس کام کے لئے تیار نہیں تھا۔ کارنیلئیس کے والدین اس شادی پر راضی نہیں تھے لیکن اس نے الٹے سیدھے حوالے دے کر انہیں بھی قائل کر لیا۔

شادی کی تقریب کا اہتمام کارنیلئیس نے اپنے گھر میں ہی کیا تھا کیونکہ انہیں گرجا گھر میں ایسی حرکت کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔ مقامی لوگوں نے بہن بھائی کی شادی پر اعتراض اور احتجاج بھی کیا لیکن وہ پھر بھی باز نا آئے اور شادی کر کے ہی دم لیا۔بہن سے شادی کرنے والے اس نوجوان کی ڈھٹائی کا یہ عالم ہے کہ اس نے الٹا اعتراض کرنے والوں کو ہی گمراہ قرار دے ڈالا ہے اور انہیں بائبل کے ازسر نو مطالعے کا مشورہ دیا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *