کراچی : ماہا علی شاہ کے کیس میں حیران کن انکشافات

کراچی (ویب ڈیسک) ڈیفنس کراچی میں ڈاکٹر ماہا کی پراسرار موت کے کیس میں استعمال ہونے والے ہتھیار کے مالک نے خود ہی پولیس سے رابطہ کرلیا ہے۔ ڈاکٹر ماہا کی پراسرار موت کے معاملے پر پولیس کی تحقیقات میں مزید انکشافات سامنے آئے ہیں،ڈاکٹر ماہا کی موت میں استعمال ہونے والے ہتھیار کے

مالک نے پولیس سے رابطہ کیا ہے۔پولیس ذرائع نے بتایا ہے کہ اس ہتھیار کے مالک سعد نصیر کے اہلخانہ سے ماہا علی کے اہلخانہ نے رابطہ کیا تھا، سعد نصیر ڈیفنس کا رہائشی ہے اور شادی شدہ ہے، سعد نصیر نے پولیس افسر سے رابطہ کیا اور اس حوالے سے اہم معلومات دیں۔سعد نصیر نے یہ ہتھیار اپنے ایک دوست کو دیا تھا، ڈاکٹرماہا کو اسکے دوست نے ہتھیار دیا یا کسی اور کے ذریعے پہنچا، سعد نصیر نے تھانے آکر سرکاری طور پر بیان قلمبند نہیں کرایا ہے۔ پولیس ڈاکٹر ماہا کے اہلخانہ اور اسکے ایک دوست کا بیان پہلے ہی قلمبند کرچکی ہے۔واضح رہے کہ سعد نصیر نامی شخص نے یہ ہتھیار 2010 ءمیں بشیر خان ٹریڈنگ کمپنی سے خریدا تھا، جبکہ ڈاکٹر ماہا علی شاہ کے دوست جنید نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ اور ڈاکٹر ماہا جلد شادی کرنے والے تھے۔ کراچی میں ڈاکٹر ماہا کی پراسرار موت کے کیس میں استعمال ہونے والے ہتھیار کے مالک نے خود ہی پولیس سے رابطہ کرلیا ہے۔ ڈاکٹر ماہا کی پراسرار موت کے معاملے پر پولیس کی تحقیقات میں مزید انکشافات سامنے آئے ہیں،ڈاکٹر ماہا کی موت میں استعمال ہونے والے ہتھیار کے مالک نے پولیس سے رابطہ کیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.