پاکستانیوں !!! شکرالحمداللہ ، خطرناک وبا سے جان چھوٹ گئی ۔۔۔۔ مارکیٹیں اور باقی کاروباری ادارے کب تک کھل جائیں گے؟ حکومت پاکستان نے قوم کو شاندار خوشخبری سنادی

کراچی(ویب ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور صوبائی وزیر اطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ تاجروں کی مشکلات کا احساس ہے اور وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کے ساتھ اجلاس میں جلد معاملات طے پاجائیں گے۔تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر اطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ صوبے میں اشیائے ضروریہ کےسٹورز پہلے ہی کھلے ہوئے ہیں،سندھ میں گروسری سٹورز، میدیکل اسٹورز اور

دیگر ضروریات زندگی کےسٹورز اور دکانیں پہلے ہی کھلی ہوئی ہیں،تاجروں کی تنظیموں سے سندھ حکومت کے مذاکرات بھی ہوئے ہیں اور وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ سے ہونے والی ملاقات میں مزید معالات اور ایس او پیز طے ہوں گے اور بتدریج کاروبار کھولنے پر کام ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کی کوشش ہے کہ وہ تاجروں کو صوبائی ٹیکسز میں ریلیف دے اور ان کو قرضے فراہم کرنے میں بھی مدد کرے لیکن اس وباءسے متعلق احتیاط کو بالائے طاق نہیں رکھ سکتے،عوام کی جان اور ان کی صحت کو اولین تر جیح دی جائے گی۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ کاروبار ایک دم نہیں کھل سکتا بلکہ آہستہ آہستہ کچھ چیزیں کھولنے کے لئے ایس او پیز بنا رہے ہیں، ہماری کوشش ہے کہ رمضا ن المبارک میں عوام کو احتیاطی تدابیر کے ساتھ ریلیف دیں گے،وزیر اعلیٰ سندھ نے پی ایم اے کو ہدایات دی ہیں کہ وہ کلینک چلانے کے ایس او پیز بنائیں اور جو ڈاکٹرز کلینک چلاتے ہیں وہ ان ایس او پیز کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے کلینک چلائیں۔وزیر اطلاعات سندھ نے بتایا کہ یہ بھی طے ہونا چاہئے کہ ایک وقت میں کتنے مریض کلینک میں بیٹھیں اور ماسک اور کیا کیا ہونا چاہے؟ وزیر اعلیٰ سندھ ٹیلی کلینک کونسیپٹ کو بھی متعارف کروانا چاہتے ہیں،اس سلسلے میں انہوں نے پی ایم سے مدد کی درخواست بھی کی ہے، وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے چھوٹے تاجروں کو ہوم ڈیلیوری کے ذریعے ایس او پی کے تحت کام کرنے کی ہدایت کردی ہے لیکن ہوم ڈیلیوری ایس او پیز کے تحت ہوگی ،وزیراعلیٰ سندھ نے ایس او پی کو مدنظر رکھ کر چھوٹے تاجروں کو روٹیشن کی بنیاد پر دکان کھولنے کی تجویز بھی دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہفتہ کے روز بانٹ لیتے ہیں کہ کس دن کس شعبے کی دکانیں کھلیں گی۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ یہ تجویز بھی زیر غور ہے کہ جس دن کپڑے کے دکانیں کھلیں اسی روز درزی اور ان سے منسلک دکانیں کھولی جائیں، اسی طرح سے جس دن اے سیز والوں کی دکانیں کھلیں گی اس دن الیکٹرانک، اے سیز لگانے والوں کی دکانیں بھی کھولیں گے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ نے صوبائی وزرا سعید غنی، سید ناصر حسین شاہ، امتیاز شیخ پر مشتمل کمیٹی قائم کردی ہے جو کہ 24 گھنٹوں میں تاجروں سے ملکر ایس او پیز بنائیں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.