بریکنگ نیوز:شریف خاندان لٹ گیا برباد ہو گیا، کچھ بھی پلے نہ رہا،اسحاق ڈار کے گھر کے بعد جاتی امراء کو پاکستان کی سب سے بڑی غریبوں کی پناہ گاہ بنانے کی خبر آگئی

لاہور (ویب ڈیسک) وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ شہباز شریف کو جاتی امراء پناہ گاہ بنانا نظر آرہا ہے، اسحاق ڈار مفرور ہیں، بھگوڑے پیش نہ ہوں تو جائیداد کی نیلامی ریاست کا حق ہے۔ چینل 5 سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ شجاعت پرویز الٰہی سمجھدار سیاستدان ہیں،

اتحادیوں سے کوئی ناراضگی نہیں۔ ومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے بیانات پر وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے رد عمل میں کہا ہے کہ شہباز شریف کی جانب سے اسحاق ڈار کے گھر کو پناہ گاہ بنانے پر واویلا سمجھ سے بالاتر ہے۔ اسحاق ڈار نیب کے کیسز میں عدالتوں کو مطلوب ہیں۔ فیاض الحسن چوہان کا مزید کہنا تھا کہ دنیا بھر میں نادہندگان کی جائیداد قُرقی و نیلامی قانونی و آئینی عمل ہے۔ حکومتِ پاکستان نے اسحاق ڈار کی جائیداد نیلام کرنے کی بجاۓ عام عوام کی فلاح کے لیے استعمال کرنا مناسب سمجھا۔ شہباز شریف کی جانب سے اسحاق ڈار کی ملک کے لیے خدمات کا بیان مضحکہ خیز ہے۔ اسحاق ڈار نے ملک کو 24000 ارب کا مقروض کیا۔ فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ اسحاق ڈار آلِ شریف کے کالے دھن کو سفید اور جھوٹ کو سچ کی خدمات بخوبی سر انجام دیتے رہے۔ آلِ شریف کی منشی گیری کے چکر میں اسحاق ڈار نے ملکی معیشت کی کمر توڑ ڈالی۔ اسحاق ڈار قوم کو معاشی نمبروں کے ہیر پھیر میں پھنسا کر رفو چکر ہو گئے۔ مسلم لیگ ن کے رہنما سابق وفاقی وزیر خزانہ کے گھر کو پناہ گاہ میں بدل دیا گیا ۔حکومت نےا سحاق ڈار کے گھر میں بستر لگوا دیئے، سات کنال کے بنگلے میں تمام کمروں میں بستر لگا دیئے گئے، گھر کے باہر پناہ گاہ کا بورڈ لگا دیا گیا،گھر کے دونوں طرف وسیع لان ہے، اسحاق ڈار کے گھر میں موجود تمام کمرے ائیر کنڈیشنڈ ہیں جہاں غریب افراد گرمیوں میں سکون سے رہ سکیں گے ۔پنا گاہ میں خواتین کی رہائش کا الگ انتظام کیا گیا ہے، کھانے کے ٹیبل بھی لگوا دیئے گئے، اسحاق ڈار جس کھانے کے میز پر بیٹھتے تھے اب وہاں غریب بیٹھیں گے ۔سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے گھر کی نیلامی ہونی تھی تا ہم عدالتی حکم امتناع اور گاہک نہ آنے کی وجہ سے بولی روک دی گئی تھی، ،اسسٹنٹ کمشنر ماڈل ٹاوَن لاہورنے نیلامی اگلی تاریخ تک موخر کر دی تھی۔ اسسٹنٹ کمشنر ماڈل ٹاؤن ذیشان رانجھا نے اس موقع پر کہا کہ اسحاق ڈار کے سیکریٹری نے اسٹے آرڈر دکھایاہے قانونی ٹیم اسٹے آرڈر کا جائزہ لے گی،بارش اور موسم خراب ہونے کےباعث خریدار نہیں پہنچ سکے دونوں پہلوؤں کو مدنظر رکھتے ہوئے اگلی تاریخ تک نیلامی موخر کر دی ہے۔ قبل ازیں اسحاق ڈار کی اہلیہ کا نیب کی جانب ضبط شدہ گھر واپس لینے کا کیس،تبسم اسحاق کی احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف حکم امتناع جاری کر دیا گیا،اسلام آباد ہائیکورٹ نے 7 نومبر 2019 کے احتساب عدالت کے فیصلے کو معطل کردیا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.