پنجاب پولیس کے دبنگ افسر نوید سعید گجر کی زندگی کی کہانی

اسلام آباد(ویب ڈیسک)انسپکٹر نوید سعید گجر کا نام پنجاب پولیس کے انتہائی دلیر، نڈر اور جرأت مند مگر کرپٹ پولیس افسران میں شمار کیا جاتا ہے، انسپکٹر نوید سعید گجر نے یوں تو کئی نامی گرامی غنڈوں اور مافیا ارکان کو انجام تک پہنچایا لیکن دولت کی ہوس نے اس کی شہرت کو داغدار بھی بنائے رکھا۔

یہ وہی پنجاب پولیس کا انسپکٹر ہے جس نے سابق صدر آصف علی زرداری سے تفتیش کرتے ہوئے انکی زبان زخمی کردی تھی ۔ پولیس مقابلوں کا ماہر اوربیسیوں افراد کی زندگی کی شمع بجھانے والا کروڑ پتی برطانوی شہریت کا حامل انسپکٹر نوید سعید چند مرلے زمین کے جھگڑے میں اپنے ساتھیوں سمیت موت کی وادی میں اتر گیا ۔انڈر ورلڈ کے ٹاپ ٹین کو پولیس مقابلوں میں شوٹ کرنے سے نہ صرف اسے لاہور پولیس کی تاریخ اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف لڑائی میں بڑا نام ملا بلکہ وہ پنجاب پولیس کا ہیرو بن گیا۔ نوید سعید کی شہرت میں اس وقت زیادہ اضافہ ہو ا جب اس نے محلاتی سازشوں کا کردار بن کر پاکستان پیپلز پارٹی کے ایم پی اے سلیمان تاثیر کو پنجاب اسمبلی سے گرفتار کیا اور مزاحمت پر تھپڑ مارے اور سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کے شوہر سینٹر آصف علی زرداری سے جسٹس نظام کیس میں تفتیش کرنے کراچی پہنچا اور دوران تفتیش آصف زرداری کو کو زخمی کر ڈالا اور انکی گردن اور زبان پر زخم آئے اور وہ بے ہوش ہو گئے ، کبڈی کے کھلاڑی کے کوٹے پر بھرتی ہونے والا اسٹنٹ سب انسپکٹر اپنی بے باکی اورجرات کی وجہ سے جلد ہی اس وقت کے حکومتی ایوانوں میں داخل ہو گیا اور ان کی سیاسی شطرنج کی کھیل کا

کھلاڑی بن گیا۔مگرکروڑوں کی جائیداد اور دولت کا مالک ہو نے کے باوجود مزید دولت کی ہوس میںبرطانیہ سےواپس آتے ہی لینڈ مافیا میں شمولیت اختیار کر لی اور چند ماہ بعد ہی موت کے منہ میں چلا گیا ۔پنجاب پولیس کا انسپکٹر نوید سعید جہلم کے رہائشی ریٹائرڈ صوبیدار محمد سعید کا بیٹا تھا ۔وہ گیارہ بہن بھائی تھے اور ان کا تعلق وہاں کی مشہور گجر برادری سے تھا ۔جنہوں نے ابتدائی تعلیم دلوانے کے بعد نوید سعید کو لاہور بھیج دیا اور اس نے1982میں عارف ہائی سکول دھرم پورہ لاہور سےمیٹرک کا امتحان سیکنڈ ڈویژن میں پاس کیا اور بعد ازاں پرائیویٹ ایف اے کرنے کے بعد پولیس میں ملازمت اختیار کر لی ۔ میجرمحمد اکرم لاہورپولیس کے اس وقت سربراہ تھے جن کی نوید سعید سے عزیز داری تھی انھوں نے اس وقت کے اے آئی جی منیر ڈار سے سفارش کی اور کبڈی کے کھلاڑی کے کوٹے پر نوید سعید کو 1984میں اے ایس آئی بھرتی کروا دیا۔زیر تربیت تھانیدار کی حیثیت سے اس کی پہلی پوسٹنگ ضلع قصور میں ہوئی جو اس وقت لاہور رینج کا ہی حصہ تھا پھر وہ تربیت کیلئے سہالہ چلا گیا ان دنوں محمد اکرم گجر تھانہ مصطفےٰ آباد میں ایس ایچ او تھا ۔جو نوید سعید پر خاص شفقت کیا کرتا تھا ۔پولیس میں بھرتی کا شوق بھی نوید سعید کو انسپکٹر محمد اکرم گجرنے ڈالا تھا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *