سفارتی محاذ پر بڑی کامیابی !! امریکہ کی اہم حکومتی شخصیت پاکستان کا دورہ کریں گی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) امریکہ کی معاون نائب وزیرخارجہ ایلس ویلز آج پاکستان آئیں گی جہاں وہ سینئر پاکستانی حکام سے ملاقاتیں کریں گی۔ امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق ایلس ویلز22 جنوری تک پاکستان کے دورے پر رہیں گی۔ اس دوران وہ سینئر پاکستانی حکام سے ملاقاتیں کریں گی جس میں دوطرفہ امور اور

علاقائی صورت حال پر بات چیت کی جائے گی۔ خیال رہے ایلس ویلز کشمیر کے معاملے پر اکثر آواز اٹھاتی رہتی ہیں۔ انہوں نے کشمیر کو متنازعہ علاقہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت کی جانب سے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے سے اس مسئلے پر امریکی پوزیشن تبدیل نہیں ہوئی۔ اپنے تحریری بیان میں ایلس ویلز کا کہنا تھا کہ بھارتی مقبوضہ کشمیر میں صورتحال خراب ہے، وہاں نوجوانوں اور سیکیورٹی اہلکاروں کے درمیان لڑائی ایک معمول بن چکی ہے۔ امریکی معاون نائب وزیرخارجہ ایلس جی ویلز نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے سے اس مسئلے پر امریکی پوزیشن تبدیل نہیں ہوئی اور وہ اب بھی کشمیر کو متنازعہ علاقہ تصور کرتا ہے۔ امریکی کانگریس کی امور خارجہ کی ذیلی کمیٹی کے سوالوں کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ہم لائن آف کنٹرول کو ڈی فیکٹو سمجھتے ہیں جس نے کشمیر کے دو حصوں کو تقسیم کیا ہوا ہے۔ اپنے تحریری بیان میں ایلس ویلز نے کہا کہ بھارتی مقبوضہ کشمیر میں صورتحال خراب ہے، وہاں نوجوانوں اور سیکیورٹی اہلکاروں کے درمیان لڑائی ایک معمول بن چکی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیر میں گزشتہ دو ماہ کے دوران کئی ہزار افراد کو گرفتار کیا گیا ہے، جبکہ سینکڑوں لوگوں کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت بغیر کسی الزام کے نظربند کیا گیا ہے۔تحریری بیان میں کہا گیا کہ ہم وزیراعظم عمران خان کے حالیہ بیان کا خیرمقدم کرتے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ کشمیر میں دہشت گردی کرنے والے عناصر پاکستان اور کشمیریوں کے دشمن ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.