کورونا سے جنگ ، حکومت پاکستان نے ڈیم فنڈ کے لیے جمع کی گئی رقم کے حوالےسے بڑا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) وفاقی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ سپریم کورٹ میں جمع ہونے والے ڈیم فنڈ کے پیسوں کو ڈیم پر خرچ کرنے کیلئے حاصل کیاجائے گا۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے ٹوئٹر پر کہا کہ لوگ دیامر بھاشا ڈیم اور ڈیم فنڈ کے بارےمیں پوچھتے رہتے ہیں۔ لوگوں کو یہ بتانا

چاہتا ہوں کہ اس پراجیکٹ پر اب تک 99 ارب روپے خرچ کیے جاچکے ہیں، زیادہ تر اخراجات زمین کے حصول پر ہوئے ہیں، واپڈا کی جانب سے آنے والے چند ہفتوں کے دوران ڈیم اور اس کے سٹرکرچ کے حوالے سے ٹھیکے دینے والا ہے، دیا مر بھاشا ڈیم کی تعمیر انشاء اللہ 2027-28 میں مکمل ہوجائے گی۔ڈاکٹرز کیلئے بڑی خوشخبری، حکومت نے سب سے بڑا مطالبہ پورا کردیا، ڈاکٹر ظفر مرزا نے آگاہ کردیا۔اسد عمر نے بتایا کہ ڈیم فنڈ سپریم کورٹ کی زیر نگرانی ہے جس میں اب تک 12 ارب روپے کی رقم جمع ہوئی ہے، حکومت سپریم کورٹ سے درخواست کرنے والی ہے کہ یہ رقم ڈیم کی تعمیر پر اخراجات کرنے کیلئے ریلیز کی جائے۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے اسلام آباد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کنسٹرکشن انڈسٹری کے لیے بڑی خوشخبری سناتے ہوئے کہا کہ میں آج انشاءاللہ کنسٹرکشن انڈسٹری کے لیے بہت بڑے پیکیج کا اعلان کرونگا کیونکہ کنسٹرکشن انڈسٹری کی ترقی کے بغیر پاکستان کی ترقی ناگزیر ہے۔عمران خان نے تقریب سے خطاب میں کہا کہ ملک میں صنعت کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے کیونکہ بزنس کمیونٹی کے تعاون کے بغیر پاکستان آگے نہیں بڑھ سکتا۔ انہوں نے کہا کہ دیکھ رہے ہیں کہ کونسی انڈسٹری کو ان حالات میں چلنے دینا چاہیے اور کس کو نہیں۔ جبکہ ملک میں لاک ڈاون کو دو ہفتے آگے بڑھایا گیا ہے۔بعدازاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں ایک طرف غربت ہے تو دوسری طرف کرونا وائرس ہے۔ ہم موجودہ وسائل کے ساتھ کرونا پر قابو پا لیں گے جبکہ پاکستان میں کرونا کا پھیلاو دیگر ممالک کی نسبت کم ہے۔وزیراعظم عمران خان نے احساس غربت پروگرام پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ اس پروگرام کے ذریعے ایک کروڑ بیس لاکھ غریب عوام تک پہنچا جائے جن کا ہمارے پاس کوئی ریکارڈ ہی نہیں ہے۔ احساس غربت پروگرام کے ذریعے ان لوگوں کی مالی مدد کی جائے گی تاکہ ان کا معیار زندگی بہتر بنایا جا سکے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.