روس کی شنگھائی تعاون تنظیم میں ایران کی مستقل رکنیت کی حمایت

ماسکو (ویب ڈیسک ) روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف نے اعلان کیا ہے کہ روسی حکومت شنگھائی تعاون تنظیم میں ایران کی مستقل رکنیت کی حمایت کرتی ہے۔آئی آر آئی بی نیوز کے مطابق روسی وزیرخارجہ سرگئی نے کہا ہے کہ روس اور شنگھائی تعاون تنظیم کے بیشتر ممالک اس تنظیم میں

ایران کی مستقل رکنیت کی حمایت کرتے ہیں۔رواں سال شنگھائی تعاون تنظیم کی سربراہی روس کو دی گئی ہے اور جون میں ماسکو کی میزبانی میں شنگھائی تعاون تنظیم کا سربراہی اجلاس منعقد ہوگا۔شنگھائی تعاون تنظیم کی بنیاد 15 جون 2001 میں چین، قزاخستان، قرقیزستان، روس، تاجیکستان اور ازبکستان کے ہاتھوں شنگھائی میں رکھی گئی جس کے بعد پاکستان اور بھارت بھی اس تنظیم میں شامل ہو گئے۔اس وقت ایران، افغانستان اور بیلاروس شنگھائی تعاون تنظیم میں نگراں رکن ممالک کی حیثیت سے موجود ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.