شیر پاکستا ن کے قابل رشک عزائم۔۔۔ وزیراعظم عمران خان تمام بڑے بڑے اسلامی ممالک کے سربراہان سے ملکر پاکستان کے تمام حکومتی اداروں کو اپنے پاوں پر کھڑا کرنے میں کامیاب،بڑی خبر آگئی

اسلام آباد(ویب ڈیسک)معاون خصوصی برائےاطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ ریاستی اداروں کی شفاف اور منافع بخش نجکاری حکومت کا عزم ہے،اداروں کو نجکاری کے ذریعے منافع بخش بنا کر عوامی مفاد میں استعمال کرینگے۔اسلام آباد میں وزیرنجکاری محمد میاں سومرو کے ہمراہ نیوز کانفرنس سےخطاب کرتےہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ

محمد میاں سومرو کی قیادت میں نجکاری کا عمل شروع ہونے جا رہا ہے،ریاستی اداروں کی شفاف اور منافع بخش نجکاری حکومت کا عزم ہے،اداروں کو نجکاری کے ذریعے منافع بخش بنا کر عوامی مفاد میں استعمال کرینگے۔اُنہوں نےکہاکہ عوامی اراضی عوام کےمفادکیلئےاستعمال کی جائےگی جبکہ گھروں کی تعمیر کےمنصوبے سے روزگار کے لاکھوں مواقع پیدا ہوں گے ۔اس موقع پرگفتگو کرتےہوئےمیاں محمدسومرو نےکہاکہ حکومت کی جانب سےقومی اداروں اوراملاک کی نجکاری کاعمل رواں مالی سال تک مکمل ہو جائے گا ، اداروں کی نجکاری میں پیپرا قوانین اور عدالتی فیصلوں کو مدنظر رکھا جائے گا ، نیلامی میں دنیا کی بیشتر نئی کمپنیوں نے دلچسپی کا اظہار کیا ہے جبکہ غیرملکی کمپنیوں نے بھی حکومتی پالیسیوں پر اعتماد کا اظہار کیا ہے،6 ریاستی اداروں اور املاک کی نجکاری کے لیے نیلامی موصول ہوچکی ہے جس کے بعد متعلقہ ادارے اور محکمے عدالتی احکامات سمیت پیپرا قوانین کو مد نظر رکھ کر ان کا جائزہ لیں گے،سٹراٹیجک سیل 10 برس بعد ہورہی ہے اور اس عمل میں عموماً 2 برس یا زائد کا دورانیہ لگ جاتا ہے جسے تقریباً ایک برس میں مکمل کرلیا گیا جبکہ نیلامی میں دنیا کی بیشتر نئی کمپنیوں نے دلچسپی کا اظہار کیا ہے،دنیا کی بڑی کمپنیاں پہلی دفعہ پاکستان میں نجکاری میں حصہ لیں گی۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی وزیرنجکاری محمدمیاں سومرو نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے قومی اداروں اوراملاک کی نجکاری کا عمل رواں مالی سال تک مکمل ہو جائے گا ، اداروں کی نجکاری میں پیپرا قوانین اور عدالتی فیصلوں کو مدنظر رکھا جائے گا ، نیلامی میں دنیا کی بیشتر نئی کمپنیوں نے دلچسپی کا اظہار کیا ہے جبکہ غیرملکی کمپنیوں نے بھی حکومتی پالیسیوں پر اعتماد کا اظہار کیا ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان اور سیکریٹری نجکاری ڈویژن کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر نجکاری میاں محمد سومرو نے کہا کہ 6 ریاستی اداروں اور املاک کی نجکاری کے لیے نیلامی موصول ہوچکی ہے جس کے بعد متعلقہ ادارے اور محکمے عدالتی احکامات سمیت پیپرا قوانین کو مد نظر رکھ کر ان کا جائزہ لیں گے،سٹراٹیجک سیل 10 برس بعد ہورہی ہے اور اس عمل میں عموماً 2 برس یا زائد کا دورانیہ لگ جاتا ہے جسے تقریباً ایک برس میں مکمل کرلیا گیا جبکہ نیلامی میں دنیا کی بیشتر نئی کمپنیوں نے دلچسپی کا اظہار کیا ہے،دنیا کی بڑی کمپنیاں پہلی دفعہ پاکستان میں نجکاری میں حصہ لیں گی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.