حکومت پاکستان کا بڑا اقدام ۔۔۔سیگریٹ فروخت کرنے والے دکانداروں کی شامت آگئی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ایف بی آر نے سگریٹ کی غیر قانونی تجارت کے خلاف کریک ڈاﺅن شروع کر دیاہے اور ملک بھر کے سیگریٹ ریٹلرز کو نوٹسز جاری کر دیئے گئے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق ایف بی آر کے ترجمان کی جانب سے جاری کر دہ بیان میں کہا گیاہے کہ فیکٹریاں ، ڈسٹریبوٹرز ، دکاندار

غیر قانونی سیگریٹ کی فروخت مکمل طور پر بندکر دیں ، سیگریٹ کے پیکٹ پر تصویر ، تحریر اور ہیلتھ وارننگ شائع کرنا لازمی ہے اور 63 روپے سے کم قیمت پر سیگریٹ فروخت کرنے والے دکاندار کو جرمانہ ہو گا ۔ترجمان ایف بی آ ر کا کہناتھا کہ جعلی سیگریٹ کی نقل و حمل میں ملوث گاڑی بھی ضبط کر لی جائے گی اور سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔بیان میں کہا گیا کہ جن پیکٹس پر تصویر اور وارننگ نہیں ہوگی اسے فروخت نہیں کیا جا سکتا ۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ پاکستان کے چھوٹے تاجر وں نے مشکل وقت میں میری مدد کی تھی،سابق ادوارمیں ٹیکس کاپیسہ ایسے استعمال کیاگیاجیسے ملک میں تیل کے ذخائرہوں۔اسلام آباد میں تاجروں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کے چھوٹے تاجر وں نے مشکل وقت میں میری مدد کی تھی ۔سکول کے بچوں نے بھی شوکت خانم کیلئے فنڈاکٹھے کرنے میں میری مدد کی، تاجرملک کا محب وطن طبقہ ہے، تاجر ٹیکس دینے میں بہت پیچھے تھے ،معاشی ٹیم اورتاجروں کے درمیان معاہدہ خوش آئند ہے۔انہوں نے کہا کہ حکمران عوام کے ٹیکسوں پر شاہانہ زندگی گزاریں گے توکون ٹیکس دے گا؟ سابق ادوارمیں ٹیکس کاپیسہ ایسے استعمال کیاگیاجیسے ملک میں تیل کے ذخائرہوں۔ عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے بیرون ملک جائیدادیں خریدی گئیں۔انہوں نے کہا کہ مجھے جوتنخواہ ملتی ہے اس سے میرے گھر کے خرچے پورے نہیں ہوتے، میں نے گھرکی سڑک اپنے پیسے سے بنائی ہے ۔میں نے اپنے رشتہ داروں کیلئے فیکٹریاں نہیں بنائیں، میرا کوئی کیمپ آفس نہیں،گھرکا خرچہ خودچلاتاہوں۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس نہیں دیں گے توملک کیسے ترقی کرے گا؟

Sharing is caring!

Comments are closed.