قرآن پر حلف اُٹھاؤ۔۔۔!!! (ن) لیگی رہنماء لندن میں کس چیز کا عہد کرتے رہے؟ پاکستان میں موجود (ن) لیگ کے سپورٹرز اور ووٹرز سر پکڑ کر بیٹھ گئے

لاہور (نیوز ڈیسک ) سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے کہا ہے کہ ن لیگی رہنماؤں سے لندن میں قرآن پر حلف لیا گیا، آرمی ایکٹ میں ترمیم کی حمایت کیلئے کیا طے پایا، اس کیلئے حلف لیا گیا کہ آپ لوگوں نے کچھ بولنا نہیں، کیا یہ وہ جمہوری رویہ ہے جس کیلئے کہتے ہیں

ہم نے بڑی تکالیف اٹھائی ہیں۔ انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی میں فیصلے بلاول بھٹو ہی کرتے ہوں گے لیکن وہاں مشاورت کا عمل توہوتاہے۔مسلم لیگ ن کو دیکھیں تو یہاں نہ پارلیمانی میٹنگ ہوتی ہے، نہ کور کمیٹی کا اجلاس ہوتا ہے، لندن بیٹھ کر کچھ لوگوں کو بلاکر قرآن پر حلف لیا جاتا ہے کہ آپ لوگوں نے بولنا نہیں ہے، خواجہ آصف نے خود کہا کہ ہم نے معاملات کو صیغہ راز میں رکھنے کا حلف اٹھایا ہوا تھا۔کیا یہی وہ جمہوری رویہ ہے جس کو بنیاد بنا کر یہ کہتے ہیں ہم نے جمہوریت کی خاطر بڑی تکالیف اٹھائی ہیں۔کارکنوں نے ضرور تکالیف اٹھائی ہیں، خواجہ آصف خود کہہ رہے ہیں کہ میاں صاحب بیمار تھے ، لیکن 100لوگ بھی باہر نہیں نکلے۔ دوسری جانب تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے آرمی ایکٹ کی حمایت کے اثرات کا جون میں عوام کو جواب مل جائے گا۔ معلوم ہوا ہے کہ آئندہ تین ماہ بعد عبوری حکومت آئے گی، جبکہ جون تک نئے الیکشن ہوں گے اور پھر نئی حکومت آئے گی۔یہ بھی کہا جارہا ہے کہ نئے الیکشن کی صورت میں پیپلزپارٹی کو سندھ اور پنجاب میں ن لیگ کو دوبارہ حکومت مل جائے گی، جبکہ مرکز میں جس کے پاس اکثریت ہوگی وہ جماعت دوسری جماعتوں کے ساتھ ملکر حکومت بنائے گی۔ اس سے قبل سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے اپنے پروگرام میں بتایا تھا کہ اپوزیشن نے آرمی ایکٹ ترمیمی بلز کی حمایت سے بڑا ریلیف حاصل کرلیا، سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے کہا کہ حمایت کیلئے انڈراسٹینڈنگ کے تحت جو ریلیف ملے گا، اس میں کیس ختم نہیں ہوں گے، تاکہ احتساب کا بھرم رہے گا، بلکہ ضمانتیں سب کی ہوجائیں گی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.