قیمتیں پھر بڑھ گئیں! پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت کتنی ہوگئی؟ جانیئے

کراچی (ٹونٹی فور سیون ڈیلی نیوز ڈیسک) ملک میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 650 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق آل پاکستان جیولرز مینوفیکچررز ایسوسی ایشن محمد ارشد کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 650 روپے اضافہ ہوا جس کے بعد فی تولہ

سونے کی قیمت 1لاکھ 15 ہزار روپے ہوگئی۔اسی طرح ملک میں 10 گرام سونے کی قیمت 555 روپے اضافے کے بعد 98 ہزار 593 روپے ہوگئی، عالمی مارکیٹ میں سونے کی قیمت میں 28 ڈالر اضافہ ہوا جس کے بعد 1970 ڈالر فی اونس پر ٹریڈنگ ہوئی۔دوسری جانب انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر 9 پیسے اضافے سے 166 روپے 26 پیسے پر بند ہوئی۔واضح رہے کہ گزشتہ روز صرافہ بازار میں فی تولہ سونا 400 روپے کے اضافے سے ایک لاکھ 14 ہزار 400 روپے کا ہوگیا تھا جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت بھی 343 روپے اضافے سے 98 ہزار 80 روپے ہوگئی تھی۔خیال رہے کہ کاروباری ہفتے کے آخری روزسونے کی فی تولہ اور دس گرام کی قیمتوں میں بالترتیب 600 اور 512 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ دوسری جانب سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر ‘ریاست، پاکستانی اداروں اور پاک فوج کے خلاف منفی پروپیگنڈہ’ پر مبنی مواد شیئر کرنے پر صحافی اسد طور کے خلاف ایف آئی آر درج کر دی گئی.اسلام آباد میں مقیم صحافی اسد طور نے ایف آئی آر کی ایک کاپی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کی۔ راولپنڈی کے رہائشی حافظ احتشام احمد کی ایک شکایت پر اسد طور کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی جنہوں نے دعوی کیا تھا کہ ‘گزشتہ چند دنوں سے (اسد طور) پاک فوج سمیت اعلیٰ سطح کے سرکاری اداروں کے خلاف توہین آمیز زبان استعمال کررہے ہیں جو قانون کے مطابق سنگین جرم ہے۔اسد طور کے خلاف درج آیف آئی آر میں پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 499 (ہتک عزت)، 500 (بدنامی کی سزا) اور 505 (بدعنوانی پر مبنی بیانات) اور پاکستان الیکٹرانک کرائم ایکٹ (پیکا) 2016 کی دفعہ 37 (غیر قانونی آن لائن مواد) شامل کی گئیں ہیں۔اسد طور نے ایف آئی آر کے اندراج کو ‘مایوس کن پیش رفت’ قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ ‘صحافی ہونے کے ناطے یہ میرے لیے افسوس ناک پیش رفت ہے کیونکہ میں کبھی خود خبر بننا نہیں چاہتا ہوں’۔ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان (ایچ آر سی پی) نے اسد طور کے خلاف درج مقدمے کی مذمت کی۔ایچ آر سی پی نے بیان میں کہا کہ ‘صحافیوں کے خلاف بڑھتے ہوئے اس طرح کے اقدامت سے اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ حکومت آزاد اظہار رائے دبا رہی ہے’۔بیان میں کہا گیا کہ ‘ایچ آر سی پی مطالبہ کرتا ہے کہ شہریوں کے حقوق کا احترام کیا جائے، حکومت اور ریاست دونوں درست اقدامات کریں’۔واضح رہے کہ اسد طور کے خلاف یہ مقدمہ پچھلے چند دنوں میں صحافیوں کے خلاف درج ہونے والی تیسری ایسی شکایت ہے۔اس سے قبل اسی طرح کی ایف آئی آر جہلم میں صحافی اور پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) کے سابق چیئرمین ابصار عالم کے خلاف بھی درج کی گئی تھی۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *