عمران خان کی بھارت میں دھوم مچ گئی۔۔۔ وہ کارنامہ جس پر پاکستانی تو کیا بھارتی اور ہندو بھی کپتان کے دیوانے ہو گئے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ہندوبرادری کیلئے تضحیک آمیز پوسٹرلگانے پر پارٹی رکنیت سے فارغ کرنے کے وزیراعظم عمران خان کے فیصلے کو نہ صرف پاکستان بلکہ بھارت میں بھی سراہا جارہا ہے۔ سوشل میڈیا کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھارتی کالم نگار سودھیندرا قلکرنی کا اپنے ٹوئٹ میں کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف

کے چئیرمین وزیراعظم پاکستان عمران خان نے اپنی پارٹی کے ایک رکن کو ہندووں کے بارے میں تضحیک آمیز بینر آویزاں کرنے کی وجہ سے پارٹی سے فارغ کر دیا۔ انکا اپنے ٹوئٹ میں مزید کہنا تھا کہ دوسری طرف بھارت میں حکمران جماعت بی جے پی نے اپنے کارکنوں کے مسلمانون کے خلاف رویہ پر اپنی آنکھیں بند کر رکھی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے اقلیتوں کے خلاف بینر لگانے پر اپنی ہی پارٹی کے ایک رکن کو پارٹی سے نکال دیا کیونکہ عمران خان نے اپنے پیغام میں واضح طور پر کہا ہےکہ پاکستان میں تمام اقلیتوں کو مسلمانوں کے برابر حقوق حاصل ہوں گے اور کسی کو اقلیتوں کے خلاف تضحیک آمیز رویہ اپنانے نہیں دینگے۔ مزید یہ کہ عمران خان کے اس فیصلے کو بھارت میں کافی پذیرائی مل رہی ہے جو کہ بھارت کے اندر نام نہاد جمہوریت کے دعویداروں کے منہ پر زور دار طمانچہ ہے۔ یاد رہے کہ کچھ روز قبل بھارتیہ جنتا پارٹی کے کارکنوں نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ پاکستان میں اقلیتوں پر ظلم ہو رہا ہےجبکہ وزیراعظم کے اس اقدام نے ان کے تمام دعووں کی قلعی کھول دی ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.