اللہ کی شان!!! ساری عمر چندہ جمع کرنے والا معیشت سنبھالنےکی بات کر رہا ہے۔۔۔احسن اقبال نے وزیراعظم عمران خان کو دنیا کا سب سے بڑا بھیکاری قرار دے دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) مسلم لیگ نواز کے سینئر رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے وزیراعظم عمران خان پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ جس شخص نے ساری زندگی چندہ جمع کیا ہو وہ معیشت کیا سنبھالے گا۔احتساب عدالت اسلام آبادمیں پیشی کے موقع پرمیڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ ایسے شخص

کا کیا وژن ہوگا۔آٹے کے بحران پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ آٹا 70 روپے کلو بھی نہیں مل رہا جبکہ بے روزگاری بھی بڑھ رہی ہے۔احسن اقبال نے کہا کہ لنگر خانہ حکومت نے ملک کو اس نہج پر پہنچا دیا، انہوں نے بڑے بڑے دعوے کیے تاہم انہوں نے نوجوان نسل کو صرف گالیاں سکھائیں۔ن لیگی رہنما کے مطابق نوجوان نسل کو نوکریوں کے لارے دیے گئے تاہم وہ ڈگریاں ہاتھ میں اٹھائے گھوم رہے ہیں لیکن روزگار ہی ختم کر دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سے مطالبہ کرتا ہوں کہ اس لیڈر کو فنڈ اکٹھا کرنے والے کسی منصب پر لگادیں اور ہماری اس اس لنگرخانہ حکومت سے ہماری جان چھڑوادیں۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ پاکستان کے چھوٹے تاجر وں نے مشکل وقت میں میری مدد کی تھی،سابق ادوارمیں ٹیکس کاپیسہ ایسے استعمال کیاگیاجیسے ملک میں تیل کے ذخائرہوں۔اسلام آباد میں تاجروں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کے چھوٹے تاجر وں نے مشکل وقت میں میری مدد کی تھی ۔سکول کے بچوں نے بھی شوکت خانم کیلئے فنڈاکٹھے کرنے میں میری مدد کی، تاجرملک کا محب وطن طبقہ ہے، تاجر ٹیکس دینے میں بہت پیچھے تھے ،معاشی ٹیم اورتاجروں کے درمیان معاہدہ خوش آئند ہے۔انہوں نے کہا کہ حکمران عوام کے ٹیکسوں پر شاہانہ زندگی گزاریں گے توکون ٹیکس دے گا؟ سابق ادوارمیں ٹیکس کاپیسہ ایسے استعمال کیاگیاجیسے ملک میں تیل کے ذخائرہوں۔ عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے بیرون ملک جائیدادیں خریدی گئیں۔انہوں نے کہا کہ مجھے جوتنخواہ ملتی ہے اس سے میرے گھر کے خرچے پورے نہیں ہوتے، میں نے گھرکی سڑک اپنے پیسے سے بنائی ہے ۔میں نے اپنے رشتہ داروں کیلئے فیکٹریاں نہیں بنائیں، میرا کوئی کیمپ آفس نہیں،گھرکا خرچہ خودچلاتاہوں۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس نہیں دیں گے توملک کیسے ترقی کرے گا؟

Sharing is caring!

Comments are closed.