ملازمین کو کارکردگی بہتر بنانے کے لئے ڈیڈ لائن دے دی گئی

حیدرآباد ٹاؤن( نیوز ڈیسک)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کی کارکردگی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے ڈیڈ لائن دے دی پبلک ریلیشن آفیسر کی طرف سے جاری بیان کے مطابق وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کی عوامی مسائل فوری حل نہ کرنے اور فلاح عامہ کے منصوبوں میں تاخیر پر

متعلقہ حکام کی سخت سرزنش کی ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ عثمان بزدارکاجنوبی پنجاب سیکرٹریٹ میں تعینات مختلف محکموں کے سیکرٹریزکو کارکردگی بہتر بنانے کی ہدایت وزیراعلیٰ آفس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے مختلف محکموں کے تعینات سیکرٹریزکا اہم اجلاس پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ نے افسران کوکارکردگی بہتر بنانے کیلئے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی جانب سے ضروری ہدایات دیں متعلقہ سیکرٹریز عوامی مسائل فوری حل کرنے کیلئے موثر اقدامات اٹھائیں۔عثمان بزدار بزدار نے کہا کہ محکموں کو اب کام کر کے دکھانا ہو گا، سست روی بالکل برداشت نہیں۔ کی جے گی ،کوتاہی پر ذمہ داروں کا تعین کر کے سخت کارروائی کی جائے گی۔ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار ہدایت کی کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ میں تعینات افسران ڈلیور کریں اورفلاح عامہ کے منصوبوں کو وقت پر مکمل کیا جائے اور عوام کی توقعات کے مطابق ڈلیورنہ کرنے والے افسر کوعہدے پر رہنے کا کوئی حق نہیں۔عثمان بزدار نے واضح کیا کہ جونتائج نہیں دے گا وہ پنجاب میں نہیں رہے گا۔انہوں نے کہا کہ دیانتدار اورفرض شناس افسران کی حوصلہ افزائی جاری رکھیں گے۔اور فلاح عامہ کے منصوبوں میں اعلیٰ معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں کروں گا فلاح عامہ کی ہر سکیم کی تھرڈ پارٹی مانیٹرنگ ہوگی۔اور عوامی منصوبوں کے لئے جاری فنڈز کو بروقت استعمال کیا جائے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ منصوبوں میں بلا جواز تاخیر کسی بھی قیمت پر قابل قبول نہیں۔اور منصوبوں میں شفافیت کو یقینی بنانے کے لئے افسران دفاتر سے باہر نکلیں اور فیلڈ میں جا کر خود جائزہ لیں ،زبانی جمع خرچ نہیں چلے گا، کام کر کے دکھانا ہوگا انہوں نے کہا گئے ،تحریک انصاف کی حکومت نے علیحدہ سیکرٹریٹ بنا کر جنوبی پنجاب کو نئی شناخت دی ہے۔تاکہ سیکرٹریٹ کے باعث جنوبی پنجاب میں بسنے والوں کو لاہورکے چکر نہ لگانا پڑیں۔ افسران دلجمعی سے فرائض سرانجام دیں اورجنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے ثمرات عوام تک پہنچائے جائیں۔ اجلاس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے سیکرٹری صحت،سیکرٹری خزانہ،سیکرٹری منصوبہ بندی و ترقیات،سیکرٹری بلدیات، سیکرٹری ہاؤسنگ،سیکرٹری اربن ڈویلپمنٹ اینڈپبلک ہیلتھ انجینئرنگ،سیکرٹری زراعت،سیکرٹری لائیوسٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ،سیکرٹری سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ،سیکرٹری قانون،سیکرٹری تعمیرات و مواصلات، سیکرٹری آبپاشی،سیکرٹری تعلیم،سیکرٹری جنگلات اورایڈیشنل سیکرٹری داخلہ نے شرکت کی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.