(ن) لیگ نے اپنے دور میں معیشت کا بیڑہ غرق کیا، بجلی مہنگی اس لیے ہوئی کیونکہ سابق دور میں ’مہنگے پاور کنٹریکٹ ‘ سائن کیے گئے،قومی اسمبلی میں حماد اظہر نے خواجہ آصف کو آرھے ہاتھوں لے لیا

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا کہ ملکی خسارے ہم پورے کررہے ہیں۔ن لیگ نے اپنے دور میں معیشت کا بیڑہ غرق کردیا۔آج مہنگی بجلی کی وجہ مہنگے پاور کنٹریکٹ ہیں۔تحریک انصاف نے کوئی پاور کنٹریکٹ سائن نہیں کیا۔تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرے ہوئے حماد اظہر کا کہنا تھا کہ

انہوں ( خواجہ آصف) نے 480 ارب کا گردشی قرضہ ادا کیا اور 1200 ارب کا گردشی قرضہ چھوڑ کر چلے گئے۔ اس 480 ارب روپے کا سود ہم ادا کررہے ہیں۔ ن لیگ نے اپنے دور میں معیشت کا بیڑہ غرق کردیا۔بجلی،گیس کی قیمتیں بڑھانا مقبول فیصلے نہیں ہوتے۔قیمتیں بڑھانا مشکل فیصلے ہوتے ہیں۔انہوں نے کہارواں سال دسمبر تک گردشی قرضے ختم کرنے ہیں۔زرمبادلہ کے ذخائر میں50فیصدسے زائد کا اضافہ ہوا۔حماد اظہر کا مزید کہنا تھا آج بجلی اور گیس کی قیمتوں کی بات ہورہی ہے، بجلی اور گیس کی قیمتیں بڑھانا کسی بھی حکومت کے لیے مقبول فیصلہ نہیں ہوتا، مجبوری ہوتی ہے، سخت فیصلےکرنا پڑے جس سے مہنگائی میں بھی اضافہ ہواوفاقی وزیر نے مزید کہاکہ ہمارے دور میں سنسنی پھیلائی گئی کہ ڈالر 200 روپے تک چلا جائے گا چینی کی قیمت میں جلد کمی آئے گی۔لیکن آٹا بحران کی وجہ سندھ حکومت کا وقت پر گندم نہ خریدنا ہے اسی وجہ سے سندھ میں قلت پیدا ہوئی، کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتیں زیادہ ہوئیں ان پر قابو پانے کے لئے کابینہ آج اہم فیصلے کرے گی، آٹے اور گندم کی قیمت نیچے آگئی ہے، سندھ اور کراچی میں بھی جلد قیمتیں نیچے آجائیں گی، گندم اور چینی بحران کی تحقیقات کو سامنے لے کر آئیں گے۔حماد اظہر نے مزید کہا کہ جب ہم نے حکومت سنبھالی توملک دیوالیہ ہونے کے قریب تھا، زرمبادلہ کے ذخائر آدھے سے بھی کم تھے، پچھلی حکومت میں پانچ سوملین ڈالر کا ہرماہ خسارہ ہو رہا تھا، سابقہ حکومت کے خسارے آج ہم پورے کر رہے ہیں، آج آئی ایم ایف ہمیں خسارے ختم کرنے کے لیے کہہ رہے ہیں، دسمبر 2020 تک ہم نے گردشی قرضوں کو صفر پر لانا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.