’’ عمران خان کو تاحیات نا اہل قرار دیا جائے‘‘ بڑا قدم اُٹھا لیا گیا

’’ عمران خان کو تاحیات نا اہل قرار دیا جائے‘‘ بڑا قدم اُٹھا لیا گیا

لاہور( نیوز ڈیسک) مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسمبلی رابعہ فاروقی نے ایک قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی ہے جس میں کہا گیاہے کہ پنجاب اسمبلی کا یہ ایوان ممنوعہ فنڈنگ کیس میں

تحریک انصاف کے خلاف الیکشن کمیشن آف پاکستان کے فیصلے کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے کیونکہ الیکشن کمیشن نے تمام تر دبائو کو بالائے طاق رکھتے ہوئے حقائق پر مبنی فیصلہ دیا ہے یہ

ایوان قرار دیتا ہےعمران خان نے الیکشن کمیشن میں غلط ڈیکلریشن جمع کروا کر بددیانتی کا ثبوت دیا جس سے پوری قوم پر عمران خان کا مکروہ چہرہ عیاں ہو گیا ہے۔

صادق اور امین کا ڈھنڈورا پیٹنے والوں کو اپنے منہ کی کھانا پڑی۔ لہٰذا یہ ایوان مطالبہ کر تا ہے کہ عمران خان کو تاحیات نااہل قرار دیا جائےاور تحریک انصاف پر پابندی عائد کی جائے کیونکہ ممنوعہ فنڈنگ کے ذریعے تحریک انصاف نے بیرونی ایجنڈے کی تکمیل کی اور ملکی سالمیت کو خطرے میں ڈالا۔

دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے کہا ہےکہ حکومت مصدقہ ثبوتوں پر ڈکلیریشن دے سکتی ہے کہ پی ٹی آئی فارن ایڈ پارٹی ہے اور اگر سپریم کورٹ یہ ڈکلیریشن برقرار رکھتی ہے تو پارٹی تحلیل ہوجائے گی۔نجی ٹی وی جیونیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنااللہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے سو فیصد درست فیصلہ کیا ہےاور اس کے فیصلے نے ثابت کیا کہ پی ٹی آئی ایک فارن فنڈڈ پارٹی ہے،

اس نے ریکارڈ میں جعل سازی کی اور اکاؤنٹس چھپائے۔قبل ازیں وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن نے حقائق پر مبنی تفتیش کی، اب حکومت اور عدلیہ کا امتحان ہے، ممنوعہ فنڈنگ کیس کے فیصلے سے ثابت ہوگیا ہے کہ عمران خان مستند جھوٹا انسان ہے۔وزیر قانونی اعظم نذیر تارڑ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے رانا ثنااللہ نے کہا کہ زبان دراز خان ہر کسی کے خلاف ایسی گفتگو کرتا ہے جو تمام اخلاقی اقدار سے گری ہوئی ہوتی ہے اور اس (عمران خان) نے الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا کے خلاف بلاجواز اتنی گھٹیا گفتگو اور زبان درازی کی مگر اس نے صبر اور دانائی سے نہ صرف اس کی گھٹیا گفتگو کا جواب نہیں دیا بلکہ انہوں نے بہت سمجھ اور تدبر کے ساتھ تمام صورتحال کا مقابلہ کرتے ہوئے قانون و آئین کے مطابق فیصلہ دیا جس پر پوری قوم ان کو اس فیصلے پر سراہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس فیصلے سے تین چار باتیں ثابت ہوئی ہیں، یہ ثابت ہوا ہے کہ فتنہ فساد خان جھوٹا آدمی ہے اور ہر معاملے میں اس کا جھوٹ ثابت ہوا ہے اور اب اس فیصلے کے بعد یہ مستند جھوٹا انسان ہے، اس فیصلے کی رو سے یہ ثابت ہوا ہے کہ اس نے غلط بیانی کی ہے، چیزوں کو چھپانے والا چور ہے اور اس کی ان تمام چوریوں کو فیصلے میں ثابت کیا گیا ہے۔انہوںنے کہاکہ اس (عمران خان) نے خیرات اور مریضوں کے نام پر پیسہ اکٹھا کیا اور وہ پیسہ سیاست پر خرچ کیا اور یہ بات بھی اس فیصلے سے پوری طرح سے عیاں ہے کہ یہ انسان بددیانت ہے۔رانا ثنااللہ نے فواد چوہدری کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ جہلم کا ڈبو کہہ رہا تھا کہ فیصلے میں ممنوعہ فنڈنگ کا کوئی ذکر نہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.