ممنوع فنڈنگ کا فیصلہ!!! ریحام خان کا رد عمل کہ رہنما آگ بگولہ ہوگئے

ممنوع فنڈنگ کا فیصلہ!!! ریحام خان کا رد عمل کہ رہنما آگ بگولہ ہوگئے

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان نے ممنوعہ فارن فنڈنگ کیس کے الیکشن کمیشن کے فیصلے پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ٹوئٹر پر جاری بیان میں ریحام خان نے کہا ‘آج ثابت ہ گیا کہ فتنہ خان صادق و امین نہیں بلکہ انتہائی جھوٹا اور انتشارپسند ہے’۔

انہوں نے سوال کیا ک ‘کیا مغرب میں کسی رہنما پر غیرملکی فنڈنگ ثابت ہونے کے بعد وہ سیاسی جماعت کا سربراہ رہ سکتا ہے؟’ریحام نے فیصلے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ‘نامعلوم افراد کے بعد پیش ہے نامعلوم اکاؤنٹس’۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ ‘قوم اب جان گئی ہ کہ امریکی سازش تحریک انتشار کے خلاف نہیں بلکہ تحریک انتشار اور اس کے لیڈر کے حق میں ہوئی، قوم کو سوچنا چاہیے ک جو شخص دن رات امریکی سازش کا چورن ان کو بیچتا رہا اس کی اپنی ممنوعہ فنڈنگ امریکا سے تھی’

۔ریحام نے کہا کہ ‘قوم کے سامنے اس شخص کو سرٹیفائیڈ صادق اور امین بنا کر پیش کیا گیا جس نے بیان حلفی بھی جھوٹا دیا ‘۔دوسری جانب الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب س تحریک انصاف کے خلاف ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ آ گیا جس پر صحافیوں نے سوالات کی بوچھاڑ کر دی۔صحافی فیاض راجہ نے کہا حقیقت یہ ہے کہ تحریک انصاف کی پارٹی فنڈنگ کا نظام سب سے زیادہ صاف اور شفاف ہے اگر ن لیگ، پیلپلز پارٹی اور جے یوآئی سمیت دیگر چودہسیاسی جماعتوں کو اس چھلنی اور اسکروٹنی میں سے گزارا گیا تو ہوشربا حقائق سامنے آئیں گے۔

عدنان عادل نے لکھا الیکشن کمیشن آف پاکستان کے فیصلہ میں عمران خان ک بیان حلفی کو غلط قرار دیا گیا ہے۔ یہ فیصلہ رجیم چینج آپریشن کا حصہ ہے۔ اس نکتہ کی بنیاد پر عمران خان پر مقدمہ بنایا جائے گا آئین کی شق 62،63 کے تحت وہ صادق اور امین نہیں۔ پی ٹی آئی سے عمران خان کو مائنس کرنا بڑا مقصد ہے۔عتیق چودھری نے کہا آج ان لوگوں کو شدید مایوسی ہوئی

جو بیان بنا رہے تھے کہ یہ فارن فنڈنگ کا کیس ہے اور پی ٹی آئی بین ہونے جا رہی ہے۔دنیا نیوز کے بیوروچیف خاور گھمن نے کہا لگتا ہے ہمارے دوست کنور دلشاد جنہوں نے جنرل مشرف کے زمانے می زبردس انتخابات کرائے کی شروع دن سے خواہش رہی ہے کہ عمران خان اور تحریک انصاف سیاست سے فارغ ہو جائے۔ اب دیکھتے اس فیصلے کے بعد کیا نتیجہ نکلتا ہے۔ارم عظیم نے کہا فارن فنڈنگ کیس کا اختتام ممنوعہ فنڈگ پر آ کر دم توڑ گیا۔ کھودا پہاڑ نکلا چوہا۔

باقی جماعتیں اپنی اپنی رسیدیں جمع کروانے کے لیے تیار ہیں ؟ملیحہ ہاشمی نے فیصلے پر کہا الیکشن کمیشن نے PTI کے 40 ہزار میں سے 13 اکاؤنٹس کی فنڈنگ “ممنوعہ” قرار دے دی اور اس کا جواب PTI جمع کروائے گی لیکن کیا الیکشن کمیشن پیپلز پارٹی اور ن لیگ سے بھی سوال کرے گا جنہوں نے ایک اکاؤنٹ کی بھ تفصیل نہیں دی؟رضوان غلزئی بولے الیکشن کمیشن دیگر جماعتوں کے فنڈنگ کیس کا فیصلہ کب سنا رہا ہے؟

اسلام آباد ہائیکورٹ ن تمام سیاسی جماعتوں کے فنڈنگ کیس ایک ساتھ سننے کا حکم دیا تھا۔رائے ثاقب کھرل نے الیکشن کمشنر کے ریمارکس پر کہا وہ فنڈز ضبط کرنا چاہ رہے تھے یہی تھی ساری کہانی، بس ٹُھس۔۔سمیع ابراہیم نے عاصمہ شیرازی کے اس فیصلے پر ٹوئٹ کو تنقید کا نشانہ بنایا اور لکھا کہ ہزاروں خواہشیں ایسی ہر خواہش پہ دم نکلے۔عدیل وڑائچ نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے وفاقی حکومت کو گراونڈ بنا کر دیا ہے کہ تحریک انصاف پر پابندی کیلئے کارروائی کرے۔عباس شبیر نے کہا پوری قوم جانتی ہے کہ چیف الیکشن کمشنر لاہور میں کس کے حکم پر کام کرتے رہے۔
ثاقب بشیر نے کہا ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ تو نوشتہ دیوار ہے کہ شوکاز نوٹس ہونا ہے اس کے بعد اصل مقابلہ پروپیگنڈے کا ہو گا کون بہتر کرتا ہے۔سلیم صافی نے فیصلہ شیئر کیا تو طارق متین نے کہا اتنی جلدی صفحہ چھیاسٹھ پر ؟ میں تو پہلے سے کہہ رہا تھا کہ حکومت , ن لیگ اور ایک چینل کو فیصلہ پورا پتہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.