عمران خان250 ملین ڈالر کی منی لانڈرنگ میں ملوث!!! حکومتی وزیر سنگین الزامات عائد کر دیئے

عمران خان250 ملین ڈالر کی منی لانڈرنگ میں ملوث!!! حکومتی وزیر سنگین الزامات عائد کر دیئے

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) وزیر مملکت برائے پیٹرولیم مصدق ملک پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پر برس پڑے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مصدق ملک کا کہنا تھاکہ 250 ملین ڈالر کی منی لانڈرنگ میں ملوث کیسے صادق اور امین ہوسکتا ہے؟

انہوں نے کہا کہ عمران خان کہتے ہیں عارف نقوی ان کے حمایتی ہیں، یہ وہی عارف نقوی ہیں

جن کو امریکا میں منی لانڈرنگ پر 290 سال قید کی سزا کا عندیہ دیا گیا ہے۔ وزیرمملکت کا کہنا تھاکہ عمران خان کے ساتھ وزیراعظم ہاؤس میں عارف نقوی کی تصاویرسوالیہ نشان ہیں، فنانشل ٹائمز نے ممنوع فنڈنگ کو بے نقاب کیا۔

ان کا مزید کہنا تھاکہ عمران خان کا کوئی ذریعہ معاش نہیں تو 250 کینال کے گھر میں کیسے رہ رہے ہیں؟ ادھر )سابق وزیراعظم و مسلم لیگ (ن) کے سینیئر نائب صدر شاہد خاقان کے خلاف ایل این جی ریفرنس میں قومی احتساب بیورو (نیب) کے تفتیشی افسر کی جانب سے مبینہ ٹیمپرنگ کا انکشاف ہوا ہے۔

اسلام آباد میں احتساب عدالت میں ایل این جی ریفرنس پر سماعت ہوئی جہاں نیب گواہ ناصر بشیر قریشی نے بیان ریکارڈ کرایا۔ ایل این جی ریفرنس میں نیب کے گواہ ناصر بشیر قریشی نے احتساب عدالت میں شاہد خاقان عباسی کے وکیل بیرسٹر ظفر اللہ خان کی جرح کے دوران انکشاف کیا کہ اس نے نیب کے تفتیشی افسر کو ریکارڈ کرائے گئے بیان میں ملزم شاہد خاقان عباسی کا نام نہیں لیا تھا مگر تفتیشی ملک زبیر نے اپنے پاس سے وہ نام بیان میں شامل کر لیا۔ گواہ نے کہا کہ اس نے نیب یا تفتیشی افسر سے کوئی رابطہ بھی نہیں کیا تھا بلکہ نیب کا نوٹس ملنے پر بیان ریکارڈ کرانے گیا جس میں یہ حقیقت ضرور بیان کی تھی کہ ان کا گیس سیکٹر میں کام کا کوئی تجربہ نہیں تھا تاہم انہوں نے معروف اومنی گروپ سے ٹینڈر میں حصہ لینے کی منصوبہ بندی اور مذاکرات ضرور کیے تھے۔ گواہ نے بتایا کہ وہ پرائیویٹ کمپنی میں سی ای او ہے جس کا ایک اور کمپنی کے ساتھ جیٹ فیول افغانستان ایکسپورٹ کرنے کا معاہدہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.