چوبیس گھنٹوں میں دوسرا بڑا اضافہ! ایل پی جی کی قیمت کہاں سے کہاں جا پہنچی؟

چوبیس گھنٹوں میں دوسرا بڑا اضافہ! ایل پی جی کی قیمت کہاں سے کہاں جا پہنچی؟

لاہور(نیوز ڈیسک) مہنگائی کے ستائے عوام کیلئے بری خبر ہے کہ ایل پی جی کی قیمت میں 24 گھنٹوں کے دوران دوسری بار 10 روپے فی کلو مزید اضافہ کر دیا گیا ہے۔

ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عرفان کھوکھر کا کہنا ہے کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے گزشتہ روز کی

طرح حالیہ اضافہ بھی کسی نوٹیفکیشن کے بغیر کیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب تو گرمی کے موسم میں بھی ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ شروع ہو گیا ہے جس کے باعث ایل پی جی غریب صارفین کی پہنچ سے دور ہوتی جا رہی ہے جبکہ بلیک میلنگ بھی عروج پر پہنچ چکی ہے۔

عرفان کھوکھر نے اپنے بیان میں بتایا کہ اوگرا کی جولائی 2022ءکیلئے قیمت 220روپے فی کلو تھی جس کے مطابق گھریلوسلنڈر 2600 اور کمرشل سلنڈر 9988 روپے میں دستیاب تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایل پی جی کی قیمت میں 10روپے فی کلو کے حالیہ اضافے کے بعد اب گھریلو سلنڈر 120

روپے اور کمرشل سلنڈر 455 روپے مہنگا ہو گیا ہے اور غریب کیلئے ایل پی جی خریدنا مشکل ہوتا چلا جا رہا ہے۔ ایل پی جی کی قیمت میں حالیہ اضافے کے بعد مارکیٹ میں گھریلو سلنڈر 240 روپے فی کلو اضافے کے ساتھ 2 ہزار 835 روپے اور کمرشل سلنڈر 10 ہزار 900 روپے میں فروخت ہو رہا ہے۔

عرفان کھوکھر کے مطابق جے جے وی ایل پلانٹ کی بندش کے باعث حکومت کو سالانہ 60 ارب روپے کانقصان ہو رہا ہے جب کہ بلیک مارکیٹنگ عروج پر پہنچ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کمپنیاں مزید قیمت بڑھانے کیلئے تیار ہیں اور اگر حکومت نے قیمتیں کنٹرول نہ کیں تو ملک گیر ہڑتال اور وزات پٹرولیم کے سامنے دھرنا دیں گے۔دوسری جانب کراچی والوں کیلئے بری خبر آگئی۔ جون کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ پر نیپرا میں سماعت ہوئی۔ جس کے بعد کے الیکڑک نے بجلی 11 روپے 37 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی۔ نیپرا نے بھی ماہانہ ایڈجسٹمنٹ کی مد میں اضافے کی منظوری دے دی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ اتھارٹی اعدادوشمار کا جائزہ لینے کے بعد تفصیلی فیصلہ جاری کرے گی۔ بتای گیا ہے کہ اطلاق کے الیکڑک کے لائف لائن صارفین پر نہیں ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.