ویڈیو اسکینڈل!! سابق چیئرمین نیب بڑی مشکل میں پھنس گئے، اہم خبر آگئی

ویڈیو اسکینڈل!! سابق چیئرمین نیب بڑی مشکل میں پھنس گئے، اہم خبر آگئی

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نور عالم خان نے ویڈیو اسکینڈل میں سابق چیئرمین نیب کو پی اے سی میں بلانے کا عندیہ ظاہر کردیا۔

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے اجلاس میں سابق چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال اور طیبہ گل نامی خاتون کے ویڈیو اسکینڈل معاملے پر چیئرمین پی اے سی

نور عالم خان نے کہا ہے کہ ایک خاتون نے سابقہ چیئرمین نیب کے خلاف شکایت بھیجی ہے۔ اجلاس میں چیئرمین پی اے سی نے بتایا کہ طیبہ گل کی طرف سے سابق چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال، ڈی جی نیب سلیم شہزاد کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

نور عالم خان نے خط کی کاپی میڈیا اور ممبران کمیٹی کو بھی دے دی۔ انہوں نے کہا کہ خاتون کی شکایت چئیرمین نیب کو بھیج کر رپورٹ طلب کی ہے ۔ کیا ہمیں سابق چیئرمین نیب اور خاتون کو بلانا چاہیے؟۔ ہمیں ہر ایک کو سننا اور موقع دینا چاہیے،

دونوں لوگ ہمارے لیے قابل احترام ہے ، تاہم سابق چیئرمین نیب ہو یا کوئی اور، سب کو اختیارات کے ناجائز استعمال کا جواب دینا ہوگا۔ واضح رہے کہ مئی 2019ء میں نجی ٹی وی نے چیئرمین نیب کی مبینہ ویڈیو اور غیر اخلاقی گفتگو نشر کی تھی۔ دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے حکومت کی جانب سے نیب قوانین میں کی گئی ترامیم کو اسی ہفتے سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جس ملک میں بدعنوانی ہو اور انصاف نہ ہو وہ ملک ترقی نہیں کر سکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ کرپشن کسی بھی نظام کی جڑیں کھوکھلی کر دیتی ہے۔ انصاف کے قانون کے بغیر کوئی ملک آگے نہیں بڑھ سکتا۔ جس ملک میں ایک طبقہ قانون سے بالاتر ہو وہ تباہ ہو جاتا ہے۔ جب قانون کی عملداری نہ ہو تو ملک بنانا رپبلک بن جاتے ہیں۔‘ ان کا کہنا تھا کہ بڑے مجرموں کو قانون کے نیچے نہیں لائیں گے تو پاکستان ترقی نہیں کرے گا۔ نیب قوانین میں ترامیم کر کے قوم کے ساتھ مذاق کیا گیا۔’امید ہے کہ سپریم کورٹ ان ترامیم کا نوٹس لے گی۔ خرم دستگیر کہتے ہیں کہ ہم اس لیے آئے کہ عمران خان 100 ججز تعینات کر کے ہمیں جیل میں ڈالنے والے تھے۔ وہ ایسے تاثر دے رہے ہیں کہ پاکستان کی عدالتیں آزاد نہیں ہیں۔‘

Leave a Reply

Your email address will not be published.