’’عامر لیاقت کو 25 کروڑ ملے، پھر اس کی موت ہوگئی‘‘ دانیہ ملک کی والدہ کا تہلکہ خیز انکشاف، نیا پنڈوراباکس کھول دیا

’’عامر لیاقت کو 25 کروڑ ملے، پھر اس کی موت ہوگئی‘‘ دانیہ ملک کی والدہ کا تہلکہ خیز انکشاف، نیا پنڈوراباکس کھول دیا

کراچی (نیوز ڈیسک ) دانیہ شاہ کی والدہ نے دعوی کیا ہے کہ عامر لیاقت اسلام آباد سے کراچی 25 کروڑ روپے لینے آیا تھا، پھر اس کی موت ہوگئی۔تیسری بیوی دانیہ شاہ نے سندھ ہائی کورٹ

میں عامر لیاقت حسین کا پوسٹ مارٹم کرانے کے لیئے درخواست دائر کردی ہے۔سندھ ہائی کورٹ میں موجود دانیہ شاہ کی والدہ نے میڈیا کو بتایا کہ عامر لیاقت کو کہیں سے 25 کروڑ

روپے ملے تھے، وہ اسلام آباد سے کراچی پیسے لینے آیا تھا۔ ایک بجے وہ واپس اسلام آباد جارہا تھا۔ دس منٹ بعد اس کی موت کیسے ہوگئی؟انہوں نے کہا کہ عامر لیاقت کے پاس 25 کروڑ روپے تھے،

اس کی گواہ بیوی ہے۔ ہم عدالت میں شواہد پیش کریں گے۔ عامر لیاقت کی موت کا جائزہ لینا ضروری ہے۔ یہ لوگ عامر لیاقت کی موت کو چھپا رہے ہیں۔

ہم عدالت اگئے ہیں اور عدالت ہی انصاف دے گی۔دوسری جانب عامر لیاقت کے ڈرائیور جاوید کا کہنا ہے کہ گھر میں عامر لیاقت کے کمرے کا دروازہ کھٹکھٹایا گیا تاہم اندر سے کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔

عامر لیاقت حسین اپنے آبائی گھر خداداد کالونی میں موجود تھے، گھر پر موجود ملازمین دروازہ کھول کر اندر گئے تو وہ بے ہوش حالت میں بستر پر موجود تھے جس کے فوری بعد انہیں ہسپتال منتقل کیا گیا۔عامر لیاقت کے ڈرائیور جاوید نے 15 پر عامر لیاقت کی طبیعت کے حوالے سے اطلاع دی تھی۔ملازم جاوید نے بتایا کہ گزشتہ شب عامر لیاقت نے سینے میں درد کی شکایت بھی کی تھی جس پر انہیں ہسپتال چلنے کا کہا گیا تاہم انہوں نے انکار کردیا اور پھر صبح ان کے کمرے سے چیخنے کی آواز بھی سنائی دی تھی۔دوسری جانب ہسپتال میں ڈاکٹرز نے بھی ان کی موت کی تصدیق کی ہے۔عامر لیاقت حسین کو تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں ڈاکٹرز نے معائنے کے بعد انتقال کی تصدیق کی۔ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ عامر لیاقت حسین کو جب ہسپتال لایا گیا تو وہ انتقال کر چکے تھے، عامر لیاقت کا پوسٹ مارٹم کرایا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.