شہباز گل کو ’’تشدد کا شور‘‘مچانے کیلیے کس نے کہا؟ آپ بھی جانیے

شہباز گل کو ’’تشدد کا شور‘‘مچانے کیلیے کس نے کہا؟ آپ بھی جانیے

ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد جہانگیر جدون نے کہا ہے کہ شہباز گل نے 10اگست کو مجسٹریٹ کے روبرو تشدد کی شکایت نہیں کی۔

ایک بیان میں جہانگیر جدون نے کہا کہ شہباز گل کو 9اگست کو گرفتار کیا گیا اور 10اگست کو مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا گیا،

وہاں انہوں نے تشدد کی شکایت نہیں کی۔ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد نے مزید کہا کہ شہباز گل کو 12اگست کو مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا گیا، اس دن

فواد چوہدری اور علی نواز اعوان نے جج سے کہا کہ ہم شہباز گل سے ملنا چاہتے ہیں۔جہانگیر جدون نے یہ بھی کہا کہ جج نے

فواد چوہدری اور علی نواز اعوان کو شہباز گل سے ملاقات کی اجازت دی، جنہوں نے ملاقات میں شہباز گل کو گائیڈ کیا کہ شور مچاؤ کہ تشدد ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جس وقت شہباز گل کو فواد چوہدری اور علی نواز اعوان گائیڈ کر رہے تھے، اس وقت میں ان کی باتیں سن رہا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *