عمران خان یہ نہیں چاہتے کہ اسٹیبلشمنٹ انکے ساتھ کھڑی ہو جائے ، وہ صرف یہ چاہتے ہیں کہ اسٹیبلشمنٹ شریف خاندان کا ساتھ نہ دے ۔۔۔۔چند زبردست دلائل

عمران خان یہ نہیں چاہتے کہ اسٹیبلشمنٹ انکے ساتھ کھڑی ہو جائے ، وہ صرف یہ چاہتے ہیں کہ اسٹیبلشمنٹ شریف خاندان کا ساتھ نہ دے ۔۔۔۔چند زبردست دلائل

کراچی(ویب ڈیسک)نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے تجزیہ کاروں محمل سرفراز، حفیظ اللہ نیازی مظہر عباس نے کہاہے کہ عمران خان چاہتے ہیں

اسٹیبلشمنٹ ان کا ساتھ دے، چیف الیکشن کمشنر پر الزامات درست نہیں، ثبوت تھے تو عمران خان جوڈیشل کمیشن کیوں نہیں گئے، اطہر کاظمی نے کہا کہ

عمران خان کہہ رہے ہیں اسٹیبلشمنٹ نیوٹرل رہے۔ تفصیلات کے مطابق پروگرام کی میزبان علینہ فاروق شیخ کے پہلے سوال کیا پی ٹی آئی اسٹیبلشمنٹ کے سیاسی کردار کو ختم کرنا چاہتی ہے یا

اپنے حق میں کردار ادا کرنے کا مطالبہ کررہی ہے؟ کا جواب دیتے ہوئے تجزیہ کار محمل سرفراز نے کہا کہ پی ٹی آئی چاہتی ہے اسٹیبلشمنٹ ان کے حق میں کردار ادا کرے. عمران خان اداروں کو نیوٹرل ہونے کا نہیں کہہ رہے ہیں،

سابق وزیراعظم نے سیاسی بیانیہ کو خطرناک رنگ دے دیا ہے، پچھلی ایک دہائی میں فوج اور عدلیہ کی سیاسی مداخلت صرف عمران خان کو اقتدار میں لانے کیلئے ہوئی،

ن لیگ اور پیپلز پارٹی سیاسی جماعتیں ہیں انہیں بہت سی چیزیں مینج کرنا آتی ہیں۔ اطہر کاظمی کا کہنا تھاکہ عمران خان کی حکومت صرف ن لیگ نے نہیں گرائی ہر ادارے نے اپنا کردار ادا کیا، عمران خان کہہ رہے ہیں اسٹیبلشمنٹ نیوٹرل رہے اور اپنا آئینی کردار ادا کرے اور پارٹیوں کی سمت تبدیل یا ان میں تفرقہ نہ ڈلوائے، سابق وزیراعظم کا مطالبہ یہ نہیں کہ اسٹیبلشمنٹ ان کے ساتھ کھڑی ہوجائے ،وہ کہتے ہیں کہ آپ شہباز شریف کو اپنے کندھے پر بٹھا کر حکومت میں نہ لائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.