رگوں کی سوجن ، رگوں کا دب جانا، علامات، وجوہات، گھریلو علاج ٹانگوں اور پنڈ لیوں میں درد ہونا

رگوں کی سوجن ، رگوں کا دب جانا، علامات، وجوہات، گھریلو علاج ٹانگوں اور پنڈ لیوں میں درد ہونا

آپ کو نسوں کی سوجن یانسوں کا گچھا بن جانا جس سے نسیں جلد کے اوپر باہر نیلی نیلی نظرآتی ہیں جن میں شدید درد اور تکلیف ہوتی ہے ۔ اس کی وجوہات، علامات اور

اس کے لیے بہترین گھریلو علاج بتائیں گے۔ جس کے استعمال سے بہت فائدہ پہنچے گا۔ نسوں کی سوجن کو ویریکل سرکیلوین بھی کہتے ہیں یہ زیادہ تر ٹانگوں میں ہوتا ہںے جس سے ٹانگوں میں درد رہتاہے

اورچلنے پھرنے میں دشواری ہوتی ہے۔ اس مرض میں جسم کے نچلے حصے میں خون کا بہاؤ بڑھ جاتا ہے جس کی وجہ سے نسوں کے وال خراب ہونے لگتے ہیں وال خراب ہونے کی وجہ سے نسوں میں خون جمنے لگتا ہے جس سے نسوں میں سوجن آجاتی ہے۔ خون جمنے کی وجہ سے بلڈ سرکولیٹ صیحح طریقے سے نہیں ہوپاتا۔ جس کی وجہ سے ٹانگوں یا پنڈلیوں میں درد رہتاہے۔

نسوں کے وال خراب ہونا یا بند ہو جانا کا مسئلہ زیادہ تر ان لوگوں کو ہوتاہے جو جسمانی محنت مشقت کا کام نہیں کرتے۔ بلکہ جو لوگ ایک جگہ بیٹھ کر کام کرتے ہیں۔ یا زیادہ دماغی کام کرتے ہیں۔ یا وہ لوگ زیادہ تر کام کھڑے ہوکر کرتے ہیں۔ ان لوگوں کی نسوں کی سوجن کا مسئلہ اکثر ہوتا ہے۔ کیونکہ جب ہم ایک جگہ بیٹھ کر یا کھڑے ہوکر کام کرتے ہیں ان کا ٹانگوں کی طرف خون کا بہاؤ

بہت تیز ہوجاتاہے۔ جسمانی محنت نہ کرنے سے ہماری نسیں کمزور ہوجاتی ہیں۔ جس کی وجہ سے وہ بہت زیادہ خون کے بہاؤ کو برداشت نہیں کر پاتے ۔ اس لے نسوں کے وال خراب ہوجاتے ہیں۔ اس کے علاوہ ایسے افراد جو بہت زیادہ وزن اٹھاتے ہیں۔ جو لوگ موٹاپے کا شکار ہیں۔ ایسے افراد کا وزن زیادہ ٹانگوں کی طرف پڑتا ہے۔ جس کی وجہ سے نسوں میں سوجن یا بلاکیج ہوجاتی ہے۔

اس مرض کے شروع شروع میں ٹانگوں میں درد رہتاہے جس کو ہم نظر انداز کردیتے ہیں۔ اور بعد میں ہمیں زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ٹانگوں کی اس شکایت کی صورت میں آئل وغیرہ کی مالش کرلیتے ہیں۔ جس سے وقتی طور پر آرام آجاتاہے۔ جس سے نسیں نرم ہوجاتی ہیں۔ اور بلڈ سرکولیٹ صیحح طریقے ہوتاہے اس لیے وقتی طورپر آرام مل جاتا ہے۔ لیکن بعد میں دوبارہ درد

ہونے لگتا ہے۔ نسوں کی سوجن اور بلاکیج کو دور کرنے کے لیے ہمیں جن اجزاء کی ضرورت ہوگی۔ اس میں پانچ عدد لونگ، دو عدد دارچینی کے ٹکڑے، ایک چمچ اجوائن، ایک چمچ ادرک کا رس اور پانچ عدد کالی مرچ کے دانے اور تین چمچ شہد چاہیے ہوں گے۔ یہ تمام اجزاء ہمارے دل کو طاقت ور بناتے ہیں۔ اور ہماری نسوں میں جمے ہوئے کولیسٹرول کو نکالنے میں مدد دیتے ہیں۔ یہ نسوں کی کمزوری کو دور کرکے بلڈ سرکولیٹ ہونے میں آسانی پیدا کرتے ہیں۔ اگر ان اجزاء کا استعمال روز مرہ کی ڈائیٹ میں بڑھا دیں تو ہم جوڑوں کے درد ، بلڈپریشر، بلڈ کولیسٹرول، دل کی کمزوری، نسوں کی سوجن اور خون کی خرابی اور بہت سے مسائل بچ سکتے ہیں۔ شہد کے علاوہ تمام اجزاء کو دو گلاس پانی میں ڈال کر چولہے پر چڑھا دیں ۔ جب پانی ایک گلاس رہ جائے
تو اتار کر فلٹر کر لیں۔ اب اس میں شہد مکس کر لی اس کو آپ نے نیم گرم پی لینا ہے۔ یہ آپ نے روزانہ رات کو سونے سے پہلے پینا ہے اس کے بعد کوئی چیز کھانی پینی نہیں ہے۔ اس کو کم از کم دو ہفتے لگاتار استعمال کریں۔ اس کے دو تین دن کے استعمال یہ آپ کو واضح فرق محسوس ہوگا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *